تاریخ شائع کریں2022 7 December گھنٹہ 15:27
خبر کا کوڈ : 576134

امریکہ چاہتا ہے کہ ایران شام اور افغانستان بن جائے

امریکیوں کا خیال تھا کہ ملک رک جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اپنے پڑوسیوں سے رابطے کے لیے ہمیں FATF کا رکن بننا چاہیے لیکن اس دوران آپ سب نے دیکھا کہ خطے کے ممالک کے ساتھ ہمارا رابطہ اور خطے کا تجارتی انفراسٹرکچر میں پہلے سے کہیں زیادہ اضافہ کیا گیا۔
امریکہ چاہتا ہے کہ ایران شام اور افغانستان بن جائے
ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ امریکہ تباہی کی تلاش میں ہیں اور ایک مضبوط ایران بنانے کے بجائے تباہ شدہ ایران بنانا چاہتا ہے۔

یہ بات سید ابراہیم رئیسی نے آج بروز بدھ  تہران یورنیورسٹی میں طلباء و طالبات کے دن کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ تباہی کی تلاش میں ہیں اور ایک مضبوط ایران بنانے کے بجائے تباہ شدہ ایران بنانا چاہتا ہے۔ امریکہ چاہتا ہے کہ ایران شام اور افغانستان بن جائے لیکن انہوں نے حساب کتاب میں غلطی کی اور تعلیم یافتہ ایرانی مرد و خواتین انہیں ایسا کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

رئیسی نے کہا کہ امریکہ ہماری ترقی کو روکنا چاہتا تھا اور ہم نے کبھی بھی ملک کی ترقی کے رکنے کی اجازت نہیں دی۔

انہوں نے کہا کہ امریکیوں کا خیال تھا کہ ملک رک جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اپنے پڑوسیوں سے رابطے کے لیے ہمیں FATF کا رکن بننا چاہیے لیکن اس دوران آپ سب نے دیکھا کہ خطے کے ممالک کے ساتھ ہمارا رابطہ اور خطے کا تجارتی انفراسٹرکچر میں پہلے سے کہیں زیادہ اضافہ کیا گیا۔

رئیسی نے  13ویں حکومت کی اقتصادی کامیابیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دشمن چاہتا ہے کہ ایران مضبوط نہ ہو، لیکن ہمارے عوام اور ہمارے طلباء نے انہیں ناکام بنایا، آج ایران 6 قسم کی ویکسین تیار کر رہا ہے اور برآمد کر رہا ہے، اور دشمن کی پابندیوں نے ہمیں ترقی سے نہیں روکا ہے۔
 
https://www.taghribnews.com/vdcfmvdtjw6deya.k-iw.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس