تاریخ شائع کریں2022 7 December گھنٹہ 13:36
خبر کا کوڈ : 576109

پاکستان میں تباہ کن فضائی آلودگی؛ لاہور میں سکول ہفتے میں 3 دن بند رہے گے

ملک کے مشرق میں سب سے بڑے صوبے کے طور پر ریاست پنجاب کے دارالحکومت لاہور کی ہوا حالیہ برسوں میں انتہائی غیر صحت مند حالات میں رہی ہے اور یہ صورتحال سرد موسم کے آغاز کے ساتھ حالیہ ہفتے مزید سنگین ہو گئی ہے۔ ۔
پاکستان میں تباہ کن فضائی آلودگی؛ لاہور میں سکول ہفتے میں 3 دن بند رہے گے
"لاہور" دنیا کے آلودہ ترین شہروں میں سرفہرست ہے اور اس صورتحال کے بگڑنے اور صحت کے مسائل پر پاکستانی ریاستی حکام کی تشویش کے پیش نظر اس شہر اور ریاست پنجاب کے تمام علاقوں کے سکول ایک ہفتے میں 3 دن کے لیے بند کر دیے گئے۔ 

ملک کے مشرق میں سب سے بڑے صوبے کے طور پر ریاست پنجاب کے دارالحکومت لاہور کی ہوا حالیہ برسوں میں انتہائی غیر صحت مند حالات میں رہی ہے اور یہ صورتحال سرد موسم کے آغاز کے ساتھ حالیہ ہفتے مزید سنگین ہو گئی ہے۔ ۔

پنجاب کی ریاستی حکومت کے حکام نے لاہور اور اس صوبے کے دیگر علاقوں میں آلودگی کی شدت کو ’تباہ کن‘ قرار دیا ہے اور اس معاملے میں سپریم کورٹ کی مداخلت کے بعد لاہور سمیت صوبہ پنجاب میں ہفتے میں 3 دن سکولوں کی بندش کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

لاہور، پاکستان میں ریاستی عدالت کے ججوں نے اس بات پر زور دیا کہ حکومت آلودگی پھیلانے والے عوامل پر قابو پانے اور دھواں دار نقل و حمل کو روکنے میں ناکام رہی ہے، یہی وجہ ہے کہ ماحولیاتی تحفظ کے ادارے نے پانی کے قوانین اور پالیسیوں کی خلاف ورزی کرنے والے اینٹوں کے بھٹوں اور صنعتوں کے لیے سزاؤں میں اضافہ کرنے کا حکم دیا ہے۔

لاہور اور پنجاب کے دیگر علاقوں میں سردی کے موسم میں دھند اور سموگ کے باعث شہریوں بالخصوص بچوں اور بزرگوں میں صحت کی خطرناک پیچیدگیاں پیدا ہو رہی ہیں۔

انڈیکس 454 کے ساتھ دنوں میں پنجاب ریاست کے دارالحکومت اور دیگر قریبی شہروں کی ہوا کا معیار حساس گروپوں (دل کے مریضوں، بزرگوں، بچوں اور حاملہ خواتین) کے لیے غیر صحت بخش حالات میں تھا۔

آلودگی کو کم کرنے کے لیے، پاکستان کی ریاستی حکومت کھیتوں کو جلانے، بوسیدہ کاروں کی شناخت اور آلودگی پھیلانے والے عوامل جیسے اینٹوں کی تیاری کو روکنے کے ذریعے علاج کو تیز کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

اس رپورٹ کے مطابق لاہور اور پورے صوبہ پنجاب میں سکولوں کی بندش ہفتے میں 3 دن ہو گی اور یہ سلسلہ موسم کی صورتحال کے مستحکم ہونے تک جاری رہے گا۔

حالیہ برسوں میں لاہور میں ہونے والی شدید آلودگی نے ایمنسٹی انٹرنیشنل کی آواز اٹھائی اور اس بین الاقوامی ادارے نے حکومت پاکستان کے وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی سے درخواست کی کہ مذکورہ شہروں میں ہنگامی حالت کا اعلان کیا جائے کیونکہ غیر صحت بخش ہوا میں اضافے نے زندگیاں اجیرن کر دی ہیں۔
https://www.taghribnews.com/vdchv-nmw23nqzd.4lt2.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس