تاریخ شائع کریں2022 29 November گھنٹہ 22:33
خبر کا کوڈ : 575134

اس سال 100 ملین لوگ بے گھر ہوئے ہیں

اقوام متحدہ نے منگل کے روز مزید کہا کہ 2022 میں 100 ملین سے زیادہ لوگ جنگ یا قدرتی آفات کی وجہ سے اپنے گھروں سے محروم ہو جائیں گے، لیکن وہ شاذ و نادر ہی سرخیوں میں آتے ہیں۔
اس سال 100 ملین لوگ بے گھر ہوئے ہیں
اقوام متحدہ نے اپنی ایک رپورٹ میں اعلان کیا ہے کہ اس سال جنگ اور قدرتی آفات کے باعث 100 ملین سے زائد افراد بے گھر ہوئے ہیں۔

اقوام متحدہ نے منگل کے روز مزید کہا کہ 2022 میں 100 ملین سے زیادہ لوگ جنگ یا قدرتی آفات کی وجہ سے اپنے گھروں سے محروم ہو جائیں گے، لیکن وہ شاذ و نادر ہی سرخیوں میں آتے ہیں۔

اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام (یو این ڈی پی) کے مطابق، 2050 تک، موسمیاتی تبدیلی کے نتیجے میں دنیا بھر میں 216 ملین سے زائد افراد بے گھر ہو سکتے ہیں۔ اس رپورٹ کے مطابق 2021 میں 59 ملین سے زائد افراد اپنے ممالک سے بے گھر ہوئے۔

اقوام متحدہ کے چیف ایڈوائزر لوکا رینڈا نے کہا: "پیش کردہ اعدادوشمار صرف یوکرین میں جنگ کے آغاز سے متعلق ہیں، اور حقیقی اعدادوشمار اس سے کہیں زیادہ ہیں۔" اقوام متحدہ کے ماہرین کے مطابق روس اور یوکرین کے درمیان جنگ کے دوران ساٹھ لاکھ سے زائد افراد بے گھر ہوئے۔

رندا نے دنیا کے بیشتر ممالک میں نظر نہ آنے والے بحران کی طرف اشارہ کرتے ہوئے ترقی پذیر ممالک کی حمایت نہ ہونے کی وجہ سے مہاجرین میں اضافے کے خلاف خبردار کیا۔
https://www.taghribnews.com/vdcexn8nejh8fzi.dqbj.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس