تاریخ شائع کریں2022 28 January گھنٹہ 22:25
خبر کا کوڈ : 536296

صیہونی حکومت کے ایٹمی ہتھیاروں مغربی ایشیا میں امن و سلامتی کے لئے سب سے بڑا خطرہ ہے

جنیوا میں اقوام متحدہ کے دفتر میں شام کے نمائندے حسام الدین آلا نے مغربی ایشیا کو ایٹمی ہتھیاروں سے پاک کئے جانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس مقصد کے حصول کے لئے عالمی برادری کے سنجیدہ تعاون کی ضرورت ہے۔
صیہونی حکومت کے ایٹمی ہتھیاروں مغربی ایشیا میں امن و سلامتی کے لئے سب سے بڑا خطرہ ہے
جنیوا میں اقوام متحدہ کے جنیوا دفتر میں شام کے نمائندے نے صیہونی حکومت کے ایٹمی ہتھیاروں کو مغربی ایشیا میں امن و سلامتی کے لئے سب سے بڑا خطرہ قرار دیا ہے۔

مغربی ایشا میں صیہونی حکومت ہی واحد ایسی حکومت ہے جو ایٹمی ہتھیاروں سے لیس ہے اور اس نے اب تک ایٹمی ہتھیاروں کے پھلاؤ پر پابندی اور اس کی روک تھام کے معاہدے این پی ٹی پر دستخط نہیں کئے ہیں۔ 

جنیوا میں اقوام متحدہ کے دفتر میں شام کے نمائندے حسام الدین آلا نے مغربی ایشیا کو ایٹمی ہتھیاروں سے پاک کئے جانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس مقصد کے حصول کے لئے عالمی برادری کے سنجیدہ تعاون کی ضرورت ہے۔

انھوں نے کہا کہ مغربی ایشیا میں صیہونی حکومت کے جوہری ہتھیاروں کی موجودگی سے اس بات کا پتہ چلتا ہے کہ عالمی برادری علاقے کو ایٹمی اور مہلک ہتھیاروں سے پاک کرنے اور صیہونی حکومت کو این پی ٹی معاہدے میں شمولیت پر مجبور کرنے میں ناکام رہی ہے۔

انھوں نے کہا کہ موجودہ صورت حال میں اس بات کی ضرورت ہے کہ ان ممالک کو سلامتی کی ضمانت فراہم کی جائے جن کے پاس ایٹمی ہتھیار نہیں ہیں اور اس سلسلے میں کسی بھی طرح کا امتیازی سلوک نہیں برتا جانا چاہئے۔
http://www.taghribnews.com/vdcaoinmi49neu1.zlk4.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس