تاریخ شائع کریں2021 25 October گھنٹہ 14:38
خبر کا کوڈ : 524252

افغانستان میں القائدہ کے عناصر کی موجودگی سے متعلقہ امریکہ بیان بے بنیاد ہے

افغانستان کے معاملے میں امریکا کے سابق نمائندے زلمی خلیل زاد نے سی بی ایس نیوز سے انٹرویو میں القاعدہ کے سرغنہ ایمن الظواہری کی موجودگی کے بارے میں کہا تھا اس بات کا احتمال ہے کہ وہ افغانستان یا اس کے پڑوسی ملک میں موجود ہو اور طالبان کو اس کی خبر نہ ہو۔
افغانستان میں القائدہ کے عناصر کی موجودگی سے متعلقہ امریکہ بیان بے بنیاد ہے
طالبان نے افغانستان کے امور میں امریکہ کے سابق نمائندے کے اس بیان کو بے بنیاد قرار دیا ہے جس میں انہوں نے افغانستان میں القاعدہ کی موجودگی کی بات کہی ہے۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا زلمی خلی زاد کا افغانستان میں القائدہ کے عناصر کی موجودگی سے متعلقہ بیان بے بنیاد ہے، ایسا کچھ نہیں ہے۔

طالبان کے ترجمان نے کہا، ”نہ تو ہمیں اس طرح کا کوئی خطرہ نظر آ رہا ہے، نہ ہی یہاں کوئی ہے اور نہ ہی ہم تک ایسی کوئی اطلاع پہونچی ہے جو اس سطح کی ہو۔ “

افغانستان کے معاملے میں امریکا کے سابق نمائندے زلمی خلیل زاد نے سی بی ایس نیوز سے انٹرویو میں القاعدہ کے سرغنہ ایمن الظواہری کی موجودگی کے بارے میں کہا تھا اس بات کا احتمال ہے کہ وہ افغانستان یا اس کے پڑوسی ملک میں موجود ہو اور طالبان کو اس کی خبر نہ ہو۔

انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ افغانستان-امریکہ کے مابین بے اعتمادی کا ماحول ہے اور واشنگٹن طالبان کے سرحدوں سے باہر دہشتگردوں سے نمٹنے کے رویے کا جائزہ لے رہا ہے۔
 
http://www.taghribnews.com/vdcjixei8uqe88z.3lfu.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس