تاریخ شائع کریں2021 5 May گھنٹہ 22:35
خبر کا کوڈ : 502672

ایرانی قوم القدس پرغاصبانہ قبضے کو ہرگز قبول نہیں کریں گے

آیت اللہ اعرافی نے پوری امت مسلمہ اور خاص طور سے مسلم نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ عرب اسرائیل سے تعلقات معمول پر لانے اور عالم اسلام کے اولین دشمن کے ساتھ مذاکرات کے مقابلے میں اٹھ کھڑے ہوں۔
ایرانی قوم القدس پرغاصبانہ قبضے کو ہرگز قبول نہیں کریں گے
دوسری عالمی القدس کانفرنس کے صدر نے کہا ہے کہ استقامتی محاذ نے مسئلہ قدس کو نابود کرنے کی تمام سازشوں کو ناکام بنادیا ہے۔

دوسری عالمی القدس کانفرنس کے صدر آیت اللہ علی رضا اعرافی نے نیوز ایجنسی ایران پریس سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نئی سازشوں اور منصوبوں کے ذریعے مسئلہ فلسطین کو نابود کرنا چاہتا تھا لیکن اسقتامتی محاذ کی وجہ سے اسے ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا۔

آیت اللہ علی رضا اعرافی کا کہنا تھا کہ امریکہ نے دہشت گروہ داعش کے قیام اور عرب اسرائیل تعلقات معمول پر لانے کی سازش رچا کر خطے کے حالات تبدیل کرنے کی کوشش کی لیکن استقامتی محاذ نے اسے کامیاب نہیں ہونے دیا۔

دوسری عالمی القدس کانفرنس کے صدر نے کہا کہ شہید قاسم سلیمانی کو استقامتی محاذ کے خاتمے کی غرض سے شہید کیا گیا تھا لیکن ، ان کی شہادت سے استقامتی محاذ اور بھی زیادہ مضبوط ہوگیا ہے۔

آیت اللہ اعرافی نے پوری امت مسلمہ اور خاص طور سے مسلم نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ عرب اسرائیل سے تعلقات معمول پر لانے اور عالم اسلام کے اولین دشمن کے ساتھ مذاکرات کے مقابلے میں اٹھ کھڑے ہوں۔

انہوں نے کہا کہ ایران کے دینی تعلیمی مراکز اور مجتہدین عظام اور اسی طرح عالم اسلام مل کر اسرائیل کے خلاف آواز بلند کر رہے ہیں اور خطے کے ملکوں کو بھی اسرائیل سے پوری طرح ہوشیار رہنا چاہیے۔

دوسری جانب ایران کے محکمہ تبلیغات اسلامی کے ڈپٹی کو آرڈینیٹر نصرت اللہ لطفی نے کہا ہے کہ عالمی یوم القدس کے موقع پر پورے ملک میں فلسطین کے پرچم لہرائے جائیں گے۔

یوم القدس کے حوالے سے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے، نصرت اللہ لطفی کا کہنا تھا کہ جمعت الوداع کو عالمی یوم القدس قرار دینا امام خمینی رحمت اللہ کی دور اندیشی کا نتیجہ تھا ، اور آپ کا یہ کہنا کہ یوم القدس صرف یوم فلسطین نہیں بلکہ یوم اسلام ہے، آپ کی گہری دینی بصیرت اور آگہی کی نشاندھی کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کی پابندیوں کی وجہ سے یوم القدس کے جلوسوں کا امکان نہیں ہے البتہ مختلف طرح کے پروگرام منعقد کیے جائیں گے۔ انہوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ ایرانی قوم القدس پرغاصبانہ قبضے کو ہرگز قبول نہیں کریں گے، اور ہرممکن طریقے سے فلسطین کی حمایت جاری رکھیں گے۔
 
http://www.taghribnews.com/vdcbz5bs5rhbg0p.kvur.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس