تاریخ شائع کریں2021 22 April گھنٹہ 20:50
خبر کا کوڈ : 501038

اسرائیل کی میزائل کو روکنے کی کوشش ناکام

 اسرائيلی اخبار یدیعوت احارانوت  نے جمعرات کی شام اپنی ایک رپورٹ  میں لکھا ہے کہ  اسرائيلی وزير دفاع بنی گانٹز نے ڈیمونا کے قریب میزائل فائر کئے جانے پر بیان دیا ہے ۔
اسرائیل کی میزائل کو روکنے کی کوشش ناکام
مقبوضہ فلسطین کے جنوب میں ڈیمونا ایٹمی تنصیبات کے قریب دو سو کیلو وار ہیڈ کے ساتھ ایک میزائيل حملے کے بارے میں اسرائيل کے سابق وزیر دفاع کے بیان کے بعد اب صیہونی حکومت کے موجودہ وزير دفاع نے ، میزائل  کو روک پانے میں اپنی ناکامی کا کھل کر اعتراف کیا ہے ۔

 اسرائيلی اخبار یدیعوت احارانوت  نے جمعرات کی شام اپنی ایک رپورٹ  میں لکھا ہے کہ  اسرائيلی وزير دفاع بنی گانٹز نے ڈیمونا کے قریب میزائل فائر کئے جانے پر بیان دیا ہے ۔

 خبروں کے مطابق صیہونی وزير دفاع نے دعوی کیا ہے کہ ایک انٹی ایئر کرافت میزائل ، ہوا سے ہمارے طیاروں کی سمت فائر کی گئي ہے ۔

گانٹز نے کہا ہے کہ میزائل کو روکنے کی کوشش کی گئي لیکن ہماری کوشش ناکام رہی  ، ہم اس سانحے کے بارے میں تحقیقات کر رہے ہيں۔

بنی گانٹرز کے اس بیان سے قبل ، اسرائيل کے سابق وزیر دفاع نے  ڈیمونا ایٹمی تنصیبات کے قریب میزائل فائر کئے جانے کے واقعے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایسے حالات جن میں دو سو کیلو ہتھیار کے ساتھ ایک میزائيل اسرائيل کی سمت فائر کیا جاتا ہے ، کچھ بھی ہو سکتا تھا مگر نیتن یاہو ، اپنے ذاتی کام نمٹانے کے لئے آرام کر رہے ہیں

واضح رہے کہ جمعرات کو علی الصبح ،خبر ملی کہ ڈیمونا کے قریب ، میزائیل کے خطرے  کے سائرن کی آواز سنی گئي ۔

اس خبر کے بعد اسرائيلی ذرائع نے بتایا کہ شام سے ایک میزائیل مقبوضہ فلسطین کی سمت فائر کیا گيا ہے ۔  اس خبر کے کچھ ہی دیر بعد ، صیہونی فوج نے بھی خبر کی تصدیق کر دی اور کہا کہ میزائيل ، ڈیمونا کے قریبی علاقوں پر فائر کیا گیا تھا اور فوج کی ایئر ڈیفنس یونٹ ، میزائیل کو روکنے میں ناکام رہی ہے ۔
 
http://www.taghribnews.com/vdcgwq9n7ak9zz4.,0ra.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس