تقريب خبررسان ايجنسی 3 Dec 2022 گھنٹہ 18:33 https://www.taghribnews.com/ur/news/575559/آیت-اللہ-شیخ-عیسی-قاسم-کی-بحرینی-معاشرے-کو-صیہونی-بنانے-کوشش-مذمت -------------------------------------------------- ٹائٹل : آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کی بحرینی معاشرے کو صیہونی بنانے کی کوشش کی مذمت -------------------------------------------------- آیت اللہ شیخ عیسی قاسم نے اپنے ٹویٹر پر لکھا: بحرین کی حکومت کا سیاسی منصوبہ اپنے معاشرے کو زبردستی یہودی معاشرے میں تبدیل کرنا ہے جہاں یہودی تہوار اور پروگرام منعقد ہوتے ہیں اور ان علامات میں سے حانوکا اس کی ایک مثال ہے۔  متن : آیت اللہ شیخ عیسی قاسم نے صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے میں آل خلیفہ کی جلد بازی اور بحرینی معاشرے کو صیہونی بنانے کی کوشش کی مذمت کی۔ آیت اللہ شیخ عیسی قاسم نے اپنے ٹویٹر پر لکھا: بحرین کی حکومت کا سیاسی منصوبہ اپنے معاشرے کو زبردستی یہودی معاشرے میں تبدیل کرنا ہے جہاں یہودی تہوار اور پروگرام منعقد ہوتے ہیں اور ان علامات میں سے حانوکا اس کی ایک مثال ہے۔  انہوں نے مزید کہا: صیہونی حکومت کے ساتھ اسلامی اور عرب امت کی دشمنی جو مسلمانوں کی تمام اقدار، مفادات اور وجود کو نشانہ بناتی ہے، بڑھتی جارہی ہے مگر ورلڈ کپ سے آنے والی خبریں مستقبل کے لیے ایک اچھی خبر ہے۔ آیت اللہ شیخ عیسی قاسم نے اس سے قبل بحرین کے عوام سے کہا تھا کہ وہ یہودیوں کو مکانات اور زمینیں فروخت کرنے سے گریز کریں۔ انہوں نے ایک بیان میں اعلان کیا: "جس نے یہودیوں کو زمین اور مکان بیچا، اس نے مٹی اور پتھر نہیں بیچا، بلکہ وطن، قوم، تاریخ، مقدس چیزیں اور اسلام کو بیچا ہے۔" بحرین اور متحدہ عرب امارات کے درمیان مفاہمتی معاہدے پر صیہونی حکومت کے ساتھ 25 ستمبر 2019 کو دستخط کیے گئے تھے، جس پر امریکہ کے سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ثالثی کی تھی اور خلیج فارس کے ساحل پر واقع اس چھوٹے سے عرب ملک نے انکشاف کیا تھا اور اسے باضابطہ طور پر تسلیم کیا تھا۔ بحرین اور متحدہ عرب امارات کے بعد سوڈان اور مراکش کے ممالک نے بھی سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی حمایت سے اپنے اور صیہونی حکومت کے درمیان تعلقات کو معمول پر لایا۔ صیہونی حکومت کے سربراہ اسحاق ہرزوگ کل 4 دسمبر کو بحرین کے بادشاہ حمد بن عیسیٰ آل خلیفہ کی دعوت پر اس ملک کا دورہ کرنے والے ہیں۔ صیہونی حکومت کے سربراہ کا بحرین کا یہ پہلا سرکاری دورہ ہے۔ ہرزوگ 5 دسمبر کو بحرین سے متحدہ عرب امارات میں داخل ہونے والے ہیں اور متحدہ عرب امارات کے صدر محمد بن زاید سے ملاقات کے بعد ابوظہبی میں ایک کانفرنس میں شرکت کریں گے۔