تاریخ شائع کریں2022 4 October گھنٹہ 09:57
خبر کا کوڈ : 567672

دنیا کا کوئی بھی ملک یا معیشت موسمیاتی بحران سے محفوظ نہیں ہے

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے صحافیوں کو بتایا کہ دنیا کے ممالک کو موسمیاتی تبدیلی کے تباہ کن اثرات سے نمٹنے کے لیے بہت زیادہ کام کرنا ہے۔
دنیا کا کوئی بھی ملک یا معیشت موسمیاتی بحران سے محفوظ نہیں ہے
اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوتریس نے موسمیاتی تبدیلی کے تباہ کن اثرات کو کم کرنے کے لیے جی 20 حکومتوں کے کمزور اقدامات پر تنقید کرتے ہوئے اور امریکہ میں سمندری طوفان ایان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ دنیا کا کوئی بھی ملک یا معیشت موسمیاتی بحران سے محفوظ نہیں ہے۔ .

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے صحافیوں کو بتایا کہ دنیا کے ممالک کو موسمیاتی تبدیلی کے تباہ کن اثرات سے نمٹنے کے لیے بہت زیادہ کام کرنا ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ ہمارے پاس موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کے لیے ایک طویل راستہ ہے۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے جی 20 ممالک کی مالی ذمہ داریوں کی بے قدری پر تنقید کرتے ہوئے کہا: اس میدان میں دنیا کی امیر اور ترقی یافتہ معیشتوں کے اقدامات سے کسی درد کا مداوا نہیں ہوتا۔

گوٹیرس کے مطابق ان ممالک کے موجودہ وعدے اور پالیسیاں نہ صرف عالمی درجہ حرارت کو 2 ڈگری تک کم کرنے کا موقع ضائع کرتی ہیں بلکہ 1.5 ڈگری کی کمی کی بھی کوئی گنجائش نہیں چھوڑتی ہیں۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے مزید کہا: ہماری آج کی سلامتی اور ہماری بقاء کل زندگی اور موت کی کشمکش میں ہے، اب تنقید اور الزام تراشی کا وقت نہیں ہے بلکہ بات چیت اور یکجہتی کا وقت ہے۔

گزشتہ ہفتے ریاست فلوریڈا سے 150 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ٹکرانے والے طوفان ’ایان‘ نے ایسا نقصان پہنچایا کہ اس ریاست کے بعض حکام نے اسے ناقابل تلافی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اب تک اس طوفان میں مرنے والوں کی تعداد 87 تک پہنچ چکی ہے۔ .

تمام حکام بشمول مقامی اور ریاستی حکام اور کانگریس کی سطح پر اس ریاست کے نمائندے، ناقابل تلافی نقصانات کی وجہ سے مالی امداد کی تلاش میں ہیں، اور بڑے حصے A بھی ہیں۔ اس ریاست کا ایک حصہ بجلی کے بغیر رہتا ہے۔

لہٰذا، 6 اکتوبر 1401 کو سمندری طوفان ایان کی رپورٹ اور لیول فور سمندری طوفان کی طاقت کے ساتھ، ریاست فلوریڈا کے جنوب مغرب میں واقع فورٹ مائرز (فورٹ مائرز) سے ٹکرا گئی اور نہ صرف سیلاب بلکہ 98 فیصد بلیک آؤٹ بھی ہوا۔ یہ علاقہ اور تباہی پھیل گئی۔
http://www.taghribnews.com/vdccmmqpi2bqee8.c7a2.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس