تاریخ شائع کریں2022 15 August گھنٹہ 12:40
خبر کا کوڈ : 561538

مزاحمت نے عالم اسلام اور خطے کو ایک نئی پہچان دی

یہ بات علی بہادری جہرمی نے اتوار کے روز اپنے انسٹاگرام پیج پر اسلامی مزاحمت کے دن کی مناسبت سے کہی۔
مزاحمت نے عالم اسلام اور خطے کو ایک نئی پہچان دی
 ایرانی حکومتی ترجمان نے اسلامی مزاحمت خطے سے باہر کا معاملہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مزاحمت نے عالم اسلام اور خطے کو ایک نئی پہچان دینے کے ساتھ ساتھ آزادی پسند قوموں کو بہت سی فتوحات دی ہیں۔

یہ بات علی بہادری جہرمی نے اتوار کے روز اپنے انسٹاگرام پیج پر اسلامی مزاحمت کے دن کی مناسبت سے کہی۔

انہوں نے کہا کہ آج اسلامی مزاحمت کا دن ہے۔ برسوں پہلے لبنانی حزب اللہ 33 روزہ جنگ میں صیہونی حکومت کو شکست دی اور آج غزہ میں 3 روزہ مزاحمت کے نتیجے میں جنگ بندی ہوئی۔

بہادری جہرمی نے اسلامی مزاحمت خطے سے باہر ایک معاملہ بن چکی ہے جو اسلامی مزاحمت نہ صرف ناقابل تردید ہے  بلکہ جس کے پاس ایک بڑھتے ہوئی طاقت ہے۔

علی بہادری جہرمی نے کہا کہ ان دنوں یمن اسلامی مزاحمت نے عراق، افغانستان، شام ، افریقہ اور لاطینی امریکہ میں مزاحمت کی سرحدوں کو اس حد تک پھیلا دیا ہے کہ عالمی استکبار آسانی سے اپنی طاقت اور استعمار کو وسعت نہیں دے سکتا۔

انہوں نے کہا کہ مزاحمت نے عالم اسلام اور خطے کو ایک نئے تشخص دینے کے علاوہ آزادی پسند اقوام کو بہت سی فتوحات دی ہیں۔
http://www.taghribnews.com/vdchxznm623n-md.4lt2.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس