تاریخ شائع کریں2022 16 May گھنٹہ 22:02
خبر کا کوڈ : 549859

یونان: روس نے نیٹو کو 32 ممالک تک بڑھانے کے لیے یوکرین پر حملہ کر دیا

یونانی وزیراعظم نے کہا کہ روس یوکرین پر حملہ کرکے نارتھ اٹلانٹک ٹریٹی آرگنائزیشن کے ارکان کی تعداد بڑھانے میں کامیاب ہوا ہے۔
یونان: روس نے نیٹو کو 32 ممالک تک بڑھانے کے لیے یوکرین پر حملہ کر دیا
 یونانی وزیر اعظم کراکاس میتسوتاکس نے پیر کے روز کہا کہ روس یوکرین پر حملہ کرکے شمالی بحر اوقیانوس کے معاہدے کو وسعت دینے میں کامیاب ہوگیا ہے۔

انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ "یوکرین پر حملہ کر کے، روس نیٹو کو متحد کرنے اور اسے 30 ممبران سے 32 ممالک تک پھیلانے میں کامیاب ہوا۔"

انہوں نے کہا کہ "سویڈن اور فن لینڈ کی نیٹو میں شمولیت سے اتحاد کو تقویت ملے گی اور یورپی سلامتی اور استحکام کو تقویت ملے گی۔"

جہاں یوکرین میں تنازع جاری ہے، روس کے ساتھ مشترکہ سرحد کی وجہ سے سویڈن بالخصوص فن لینڈ کے الحاق کا معاملہ ماسکو اور مغرب کے درمیان محاذ آرائی کا ایک نیا موڑ بن گیا ہے۔ سویڈن کے حکمران سوشل ڈیموکریٹس نے اتوار کی شام اعلان کیا کہ ملک نے باضابطہ طور پر نیٹو کی رکنیت کے لیے درخواست دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ چند گھنٹے قبل، فن لینڈ کے صدر اور حکومت نے ماسکو کی وارننگ کے درمیان یوکرین میں روسی خصوصی فوجی کارروائیوں کے درمیان 30 ملکی فوجی اتحاد کی توسیع کی راہ ہموار کرنے کے لیے نیٹو میں شمولیت کے منصوبوں کا اعلان کیا۔

ایسے منصوبے اور فیصلے جنہوں نے روسی انتباہات اور ردعمل کو اکسایا ہے۔ ان فیصلوں کے اعلان کے بعد روسی فیڈریشن کونسل کے سیکورٹی اور دفاعی کمیشن کے سربراہ نے فن لینڈ کے ساتھ سرحدی لائنوں کو مضبوط کرنے کا اعلان کیا۔ اسکینڈینیوین ممالک میں سے ایک کے طور پر، فن لینڈ کی روس کے ساتھ ایک ہزار کلومیٹر سے زیادہ کی سرحد ہے اور روس کے ساتھ سرحد کا اشتراک کرنے والا پہلا ملک ہے جو نیٹو میں شامل ہونے جا رہا ہے۔

قبل ازیں اقوام متحدہ میں روس کے نائب نمائندے دمتری پولیانسکی نے خبردار کیا تھا کہ "فن لینڈ اور سویڈن کی نیٹو میں رکنیت اور ان دونوں ممالک میں اتحادی فوج کی موجودگی سویڈش اور فن لینڈ کی سرزمین کو روسی فوج کے لیے ممکنہ ہدف بنا سکتی ہے۔"
http://www.taghribnews.com/vdcjiheihuqexoz.3lfu.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس