تاریخ شائع کریں2022 29 March گھنٹہ 14:38
خبر کا کوڈ : 543649

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کا اسکول میں حجاب معاملے سپریم کورٹ میں چیلنج

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے اسکول میں طالبات کے حجاب کرنے کے معاملے میں کرناٹک ہائی کورٹ کے 15 مارچ کے سنائے گئے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔ 
آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کا اسکول میں حجاب معاملے سپریم کورٹ میں چیلنج
آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے اسکول میں حجاب معاملے میں کرناٹک ہائی کورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے اسکول میں طالبات کے حجاب کرنے کے معاملے میں کرناٹک ہائی کورٹ کے 15 مارچ کے سنائے گئے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔ 

مونسہ بشریٰ اور جلیسہ سلطانہ یاسین کی مشترکہ عرضی میں، کہا گیا ہے کہ مذہب کے ماننے والے شخص کو "اپنے بالوں کو کپڑے کے ٹکڑے سے ڈھکنے کے لئے" ایڈجسٹ کیے بغیر لباس میں "یکسانیت" لانے پر بہت زیادہ زور دینا انصاف کا مذاق ہے۔

درخواست میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ جہاں تک قرآن پاک میں صحیفوں کی تشریح کا تعلق ہے اس پر تمام نظریات کے علمائے کرام کے درمیان اتفاق رائے ہے کہ حجاب واجب (لازمی) ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سپریم کورٹ میں کئی اور عرضیاں دائر کی گئی تھیں۔ متعلقہ عرضی گزاروں نے اس معاملے کی فوری سماعت کی درخواست کی تھی، لیکن سپریم کورٹ نے ان کی درخواست کو مسترد کر دیا تھا۔

قابل ذکر ہے، کرناٹک ہائی کورٹ نے ریاستی اسکولوں میں لڑکیوں کے حجاب پہننے پر پابندی کو برقرار رکھا تھا۔
http://www.taghribnews.com/vdcayenmo49nyi1.zlk4.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس