تاریخ شائع کریں2022 22 January گھنٹہ 20:50
خبر کا کوڈ : 535519

یمنی افواج و انصار اللہ کو انسانت کا خیال

یمنی فورسز عام شہریوں کو نشانہ بنانے کی صلاحیت نہیں رکھتیں۔ اس کے برعکس ان کے پاس یہ طاقت ہے لیکن وہ غیر انسانی سلوک کی اسی دلدل میں دھنسنا نہیں چاہتے جس میں جارح یمنی شہریوں کا قتل عام کر کے دھنس چکے ہیں۔
یمنی افواج و انصار اللہ کو انسانت کا خیال
یمنی افواج کے پاس اب جو ہتھیار ہیں وہ بہت درست ہیں اور جیسا کہ پہلے کہا گیا تھا کہ ان کے ہتھیار اب قدیم نہیں ہیں۔

یمنی صحافی علی الدروانی نے العالم نیوز نیٹ ورک کو بتایا کہ "تمام رپورٹس سے پتہ چلتا ہے کہ یمنی فورسز اب بیلسٹک میزائلوں اور اعلیٰ درستگی والے ڈرونز جیسے ہتھیاروں سے لیس ہیں ۔ "

انہوں نے مزید کہا: "صنعاء کی فورسز نے اپنی آٹھویں کارروائی میں کسی رہائشی یا شہری علاقوں کو نشانہ نہیں بنایا تاکہ ان کی مزاحمت کو متوازن رکھا جا سکے۔" لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ یمنی فورسز عام شہریوں کو نشانہ بنانے کی صلاحیت نہیں رکھتیں۔ اس کے برعکس ان کے پاس یہ طاقت ہے لیکن وہ غیر انسانی سلوک کی اسی دلدل میں دھنسنا نہیں چاہتے جس میں جارح یمنی شہریوں کا قتل عام کر کے دھنس چکے ہیں۔

سعودی اماراتی اتحاد نے جمعہ (1 جولائی) کی صبح صعدہ صوبے (شمال مغربی) کے مرکزی حراستی مرکز اور کئی دیگر علاقوں کو نشانہ بنایا، جس میں صرف مرکزی حراستی مرکز میں 77 افراد ہلاک اور 223 دیگر زخمی ہوئے۔
 
http://www.taghribnews.com/vdchzmnmw23nxmd.4lt2.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس