تاریخ شائع کریں2022 16 January گھنٹہ 23:37
خبر کا کوڈ : 534729

حماس نے فلسطینی گروپوں کے ساتھ غیر مشروط مذاکرات کے لیے آمادگی کا اعلان کردیا

خصوصی ذرائع نے بتایا کہ حماس نے الجزائر کو فلسطینی گروپوں کی مصالحت کے بارے میں اپنے خیالات پیش کیے ہیں اور اس بات پر زور دیا ہے کہ وہ غیر مشروط بات چیت کے لیے تیار ہے۔
حماس نے فلسطینی گروپوں کے ساتھ غیر مشروط مذاکرات کے لیے آمادگی کا اعلان کردیا
 تحریک حماس نے الجزائر کو فلسطینی گروہوں کی مصالحت کے بارے میں مکمل نقطہ نظر پیش کیا ہے۔

ذرائع نے المیادین کو بتایا کہ "حماس کا نقطہ نظر فلسطین کی اندرونی صورتحال میں متعدد اصلاحات پر مبنی ہے۔"

ذریعے کے مطابق اس نقطہ نظر میں فلسطین لبریشن آرگنائزیشن کی تنظیم نو اور ملک کے اندر اور باہر انتخابات کا انعقاد بھی شامل ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ اس خیال میں حماس نے اس بات پر زور دیا ہے کہ وہ غیر مشروط مذاکرات کے لیے تیار ہے۔

اس سلسلے میں تحریک فتح کے میڈیا آفس کے سربراہ "منیر الجغوب" نے آج (اتوار) کو اعلان کیا کہ چھ فلسطینی گروپوں کے نمائندے ایک دوسرے سے مذاکرات کے لیے الجزائر پہنچے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ فتح کا وفد جس کی قیادت عزام الاحمد کر رہے تھے اور مرکزی کمیٹی کے ارکان دلال سلامہ اور محمد المدنی شرکت کے لئے الجزائر روانہ ہو گیا ہے۔ الجزائر میں فلسطینی سفیر فائز ابو عطیہ بھی مذاکرات میں موجود ہیں۔

تحریک فتح، تحریک حماس، فلسطینی اسلامی جہاد، پاپولر فرنٹ، ڈیموکریٹک فرنٹ اور پاپولر فرنٹ فار دی لبریشن آف فلسطین ان گروپوں کے کمانڈر انچیف ہیں جو اپنے اختلافات کو حل کرنے کے لیے بات چیت کے لیے تیار ہیں۔

بات چیت کا خیال الجزائر کے صدر عبدالمجید تبون اور محمود عباس کے درمیان گزشتہ سال 6 دسمبر کو ہونے والی ملاقات میں اٹھایا گیا اور اس پر اتفاق کیا گیا۔ محمود عباس کے دورے کے چند روز بعد حماس کا ایک وفد سامی ابو زہری کی قیادت میں حکام سے بات چیت کے لیے الجزائر گیا۔ اسماعیل ہنیہ پہلے کہہ چکے ہیں کہ حماس کے پاس ان مذاکرات کے لیے کوئی پیشگی شرط نہیں ہے۔

الجزائر کے حلقوں کو امید ہے کہ فلسطینی گروپوں کے آمنے سامنے ہونے سے تنازعات کے حل اور قابل عمل حل تک پہنچنے کی جانب ایک بڑا قدم اٹھایا جائے گا۔
http://www.taghribnews.com/vdcj8xeihuqetaz.3lfu.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس