تاریخ شائع کریں2021 29 July گھنٹہ 17:21
خبر کا کوڈ : 513348

امریکہ نے شامی عوام کے خلاف ذرائع ابلاغ اور اقتصادی جنگ شروع کی

اس ملاقات میں  شام کے وزیر اعظم حسین عرنوس نے شامی عوام کیلئے ایرانی عوام کی فدا کاریوں اور امداد اور اسی طرح تکفیری گروہوں کے خلاف ان کی استقامت و پائمردی کی قدردانی کرتے ہوئے کہا کہ تکفیریوں کا مقابلہ کرنے کیلئےشامیوں اور ایرانیوں کا لہو ایک ساتھ ملا ہوا ہے ۔
امریکہ نے شامی عوام کے خلاف ذرائع ابلاغ اور اقتصادی جنگ شروع کی
ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے شام کے وزیر اعظم کے ساتھ ملاقات اور گفتگو کی۔

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد باقر قالیباف نے جو شام کے دورے پر ہیں کل رات  شام کے وزیر اعظم حسین عرنوس کے ساتھ ملاقات اور گفتگو کی۔ ہونے والی ملاقات میں محمد باقر قالیباف نے گزشتہ 10 برسوں کے دوران استقامتی محاذ کے ہاتھوں امریکہ اور اسرائیل کی شکست کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ اب اس نتیجے پر پہنچ چکے ہیں کہ فوجی طریقے سے ایران یا استقامتی محاذ کو شکست نہیں دی جا سکتی اسی لئے اب انہوں نے پابندیوں اور اقتصادی جنگ شروع کی ہے۔ انہوں نے شام میں امریکہ کے بعض اقدامات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ان اقدامات کا کوئی نتیجہ بر آمد نہیں ہو گا اور اسی لئے انہوں نے شامی عوام کے خلاف ذرائع ابلاغ اور اقتصادی جنگ شروع کی ہے۔

اس ملاقات میں  شام کے وزیر اعظم حسین عرنوس نے شامی عوام کیلئے ایرانی عوام کی فدا کاریوں اور امداد اور اسی طرح تکفیری گروہوں کے خلاف ان کی استقامت و پائمردی کی قدردانی کرتے ہوئے کہا کہ تکفیریوں کا مقابلہ کرنے کیلئےشامیوں اور ایرانیوں کا لہو ایک ساتھ ملا ہوا ہے ۔

اس سے قبل ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد باقر قالیباف نے شام کے صدر بشار اسد کے ساتھ ملاقات اور گفتگو کی۔ اس ملاقات میں دو طرفہ تعلقات کو فروغ دینے، دہشت گردی کے خلاف جنگ ، اقتصادی و تجارتی مسائل نیزعلاقائی اور عالمی مسائل کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ۔ جبکہ محمد باقر قالیباف نےاپنے شامی ہم منصب حمودہ صباغ سے بھی ملاقات اور گفتگو کی۔
http://www.taghribnews.com/vdcdos0kjyt0fs6.432y.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس