تاریخ شائع کریں2021 8 April گھنٹہ 17:34
خبر کا کوڈ : 499196

فلسطینی رہائشی  علاقوں  میں غیر قانونی آباد کاری کی منظوری

عبرانی اخبار ہاریٹز  کے مطابق گذشتہ رو زقابض ریاست اسرائیل میں صہیونی بلدیاتی ادارے لوکل پلاننگ اینڈبلڈنگ کمیٹی کے توسط سےمقبوضہ بیت المقدس شہر کےمشرق میں صہیونی  آبادکاری بستی کے لیے دو ہزار سے زیادہ یونٹوں کی تعمیر کی منظوری دے دی گئی۔
فلسطینی رہائشی  علاقوں  میں غیر قانونی آباد کاری کی منظوری
 قابض ریاست میں صہیونی بلدیاتی ادارے کا فلسطینی رہائشی  علاقوں  میں غیر قانونی آباد کاروں کے لیے مکانات کی تعمیرکی منظوری القدس پر قبضے کی مذموم سازش کا حصہ ہے۔

عبرانی اخبار ہاریٹز  کے مطابق گذشتہ رو زقابض ریاست اسرائیل میں صہیونی بلدیاتی ادارے لوکل پلاننگ اینڈبلڈنگ کمیٹی کے توسط سےمقبوضہ بیت المقدس شہر کےمشرق میں صہیونی  آبادکاری بستی کے لیے دو ہزار سے زیادہ یونٹوں کی تعمیر کی منظوری دے دی گئی۔

کمیٹی کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس سے متصل ابوغنیم محلے کے اندر صہیونی غیرقانونی آباد کاروں کے لیے  540 یونٹ کی تعمیر کے احکامات جاری کیے گئے ہیں جبکہ  دوسری صہیونی بستی بیت صفافا کے قریب جفعات هماتوس محلے میں تعمیر کی جائے گی جس میں 2،000 مکانات  کے لیے منظوری دی گئی ہے۔

صہیونی ریاست میں بلدیاتی ادارے کے ان دونوں منصوبوں کا مقصد بیت صففا محلے کے رہائشی فلسطینیوں کو تنگ کرنا اور مستقبل کے  سیاسی حل کے تحت مقدس شہر سے فلسطینی شہریوں کو جبری طور پردور کر نے کی منظم سازش ہے ۔
http://www.taghribnews.com/vdchwwnk-23nwzd.4lt2.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس