تاریخ شائع کریں2021 22 February گھنٹہ 21:03
خبر کا کوڈ : 494089

مجلس خبرگان رہبری کے اجلاس کے اختتام پر بیانیہ جاری

پابندیاں ہٹائے بغیر ایٹمی معاہدے میں امریکہ کی واپسی کا نہ صرف یہ کہ کوئی فائدہ نہیں بلکہ ایران کے نقصان میں بھی ہے
مجلس خبرگان رہبری کے اجلاس کے اختتام پر بیانیہ جاری
مجلس خبرگان نے پانچویں دور کے آٹھویں باضابطہ اجلاس کے اختتام پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ پابندیاں ہٹائے بغیر ایٹمی معاہدے میں امریکہ کی واپسی کا نہ صرف یہ کہ کوئی فائدہ نہیں بلکہ ایران کے نقصان میں بھی ہے۔

رہبرکا انتخاب کرنے والی فقہا کی کونسل، مجلس خبرگان نے اپنے آٹھویں باضابطہ اجلاس کے اختتام پر ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ ایرانی عوام کی جانب سے استقامت اور مسائل و مشکلات کے تحمل سے، ایران کے اسلامی جمہوری نظام کے خلاف امریکہ کی ظالمانہ پابندیوں اور تہران کے خلاف زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی پالیسی کی ناکامی، بے نقاب ہوگئی ہے۔

بیان کے مطابق، پوری دنیا نے مشاہدہ کیا ہے کہ امریکہ کا ایک اور سرکش صدر تاریخ کے کوڑے دان میں چلا گیا اور ایران کا اسلامی جمہوری نظام اپنے عوام کی بدولت پوری آب وتاب کے ساتھ آگے بڑھ رہا ہے۔

اس بیان میں کہا گیا ہے کہ عالمی استکبار کو جان لینا چاہئے کہ ایٹمی معاہدے میں امریکہ کے واپس آنے یا نہ آنے سے ایرانی عوام کی استقامت پر کوئی اثر نہیں پڑے گا اور پابندیاں ہٹائے بغیر ایٹمی معاہدے میں امریکہ کی واپسی کا نہ صرف یہ کہ کوئی فائدہ نہیں بلکہ یہ واپسی ایران کے نقصان میں بھی ہے۔
http://www.taghribnews.com/vdcdjo0onyt0nz6.432y.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس