تاریخ شائع کریں2021 27 January گھنٹہ 01:53
خبر کا کوڈ : 490991

کمانڈر شہید سلیمانی کے قتل کا جواب امریکہ کو دینا ہو گا: ایران

امریکہ کو سوچنا ہو گا کہ سابق امریکی حکومت کی شکست خوردہ پالیسی کو جاری رکھے گی یا پھر نئی شروعات کرے گی۔۔روانچی
کمانڈر شہید سلیمانی کے قتل کا جواب امریکہ کو دینا ہو گا:  ایران
مجید تخت روانچی نے ایران اور امریکہ کے مابین قیدیوں کے تبادلے کے سوال پر کہا کہ ہم دونوں جانب سے قیدیوں کے تبادلے کیلئے تیار ہیں۔ اقوام متحدہ میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر اور مستقل نمائندے مجید تخت روانچی نے امریکی ٹی وی چینل این بی سی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ قدس بریگیڈ کے کمانڈر شہید قاسم سلیمانی کے قتل کا جواب امریکہ کو دینا ہو گا اس لئے کہ امریکہ نے ایک ایسے شخص کے خلاف جارحیت کی جس نے دہشتگردی کی بیخ کنی کیلئے جدوجہد کی تھی۔

انہوں نے ایران اور امریکہ کے مابین قیدیوں کے تبادلے کے سوال پر کہا کہ ہم دونوں جانب سے قیدیوں کے تبادلے کیلئے تیار ہیں۔ اقوام متحدہ میں ایران کے سفیر اور مستقل نمائندے نے جوہری معاہدے کے حوالے سے امریکہ کے ساتھ مذاکرات کے بارے میں کہا کہ اب گیند امریکی کورٹ میں ہے اور اب یہ امریکہ کی نئی حکومت کو سوچنا ہو گا کہ سابق امریکی حکومت کی شکست خوردہ پالیسی کو جاری رکھے گی یا پھر نئی شروعات کرے گی۔

مجید تخت روانچی نے ایک بار پھر کہا کہ اگر امریکہ نے جوہری معاہدے سے متعلق اپنے وعدوں پر عمل کیا تو ایران بھی اس معاہدے پرعمل کرے گا۔ مجید تخت روانچی نے ایران اور جوبائیڈن کی نئی حکومت کے مابین ہر قسم کے مذاکرات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی نئی حکومت کے بر سر اقتدار آنے کے بعد سے تہران اور واشنگٹن کے مابین کوئی گفتگو نہیں ہوئی ہے۔
http://www.taghribnews.com/vdcb9gba8rhb99p.kvur.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس