تاریخ شائع کریں2020 25 November گھنٹہ 16:36
خبر کا کوڈ : 483388

بم دھماکہ منصوبہ بندی کا الزام، آسٹریلوی عالم دین کی شہریت منسوخ

عبدالناصر کو عدالتی سزا کے بعد آسٹریلیا کی وزارت داخلہ نے ان کی شہریت منسوخ کردی تاہم وہ سزا کاٹنے تک آسٹریلوی شہری ہی تصور کیے جائیں گے۔ وہ پہلے شخص ہوں گے جن کی شہریت ملک میں رہنے کے دوران منسوخ کی گئی
بم دھماکہ منصوبہ بندی کا الزام، آسٹریلوی عالم دین کی شہریت منسوخ
آسٹریلیا نے فٹبال میچ کے دوران بم دھماکا کرنے کی منصوبہ بندی کرنے کے الزام پر الجزائر سے تعلق رکھنے والے 59 سالہ مسلم اسکالر کی شہریت منسوخ کردی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق عبدالناصر بن بریکہ پر دہشت گردوں کی ایسی ٹیم کی سربراہی کا الزام تھا جس نے ملبورن میں 2005 کو ہونے والے فٹبال میچ کے دوران اسٹیڈیم میں بم نصب کیا تھا۔

آسٹریلیا کی عدالت نے مسلم اسکالر کو دہشت گردی کی تربیت دینے، دہشت گرد گروپ کا حصہ ہونے اور دہشت گردی میں استعمال ہونے والا ممنوعہ مواد رکھنے پر 15 سال قید کی سزا سنائی تھی۔

عبدالناصر کو عدالتی سزا کے بعد آسٹریلیا کی وزارت داخلہ نے ان کی شہریت منسوخ کردی تاہم وہ سزا کاٹنے تک آسٹریلوی شہری ہی تصور کیے جائیں گے۔ وہ پہلے شخص ہوں گے جن کی شہریت ملک میں رہنے کے دوران منسوخ کی گئی۔

مسلم اسکالر عبدالناصر کے وکلاء شہریت کی منسوخی کے خلاف 90 دن میں اپیل دائر کرسکتے ہیں۔

آسٹریلوی قوانین میں حالیہ تبدیلی کے باعث کسی بھی شخص کو دہشت گردی کے شبے میں حراست میں لیا جا سکتا ہے اور شہریت بھی منسوخ کی جاسکتی ہے۔
http://www.taghribnews.com/vdcdjs0ojyt0js6.432y.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس