تاریخ شائع کریں۹ مهر ۱۳۹۹ گھنٹہ ۲۰:۴۵
خبر کا کوڈ : 477494

کویت میں شیخ نواف الصباح نے نئے امیر کی حیثیت سے حلف اٹھالیا

کویت میں شیخ نواف الاحمد الصباح نے 91 سالہ صباح الاحمد الصباح کے انتقال کے بعد کویت کے نئے امیر کی حیثیت سے پارلیمنٹ میں حلف اٹھالیا
کویت میں شیخ نواف الصباح نے نئے امیر کی حیثیت سے حلف اٹھالیا
کویت میں شیخ نواف الاحمد الصباح نے 91 سالہ صباح الاحمد الصباح کے انتقال کے بعد کویت کے نئے امیر کی حیثیت سے پارلیمنٹ میں حلف اٹھالیا۔

خبرایجنسی رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق کویت کے نئے امیر نے سابق حکمران شیخ صباح الاحمد الصباح کی تدفین سے قبل پارلیمنٹ کے اجلاس میں حلف اٹھایا۔

کویت کی کایبنہ نے ولی عہد شیخ نواف الاحمد الصباح کو فوری طور پر نیا امیر نامزد کردیا تھا کیونکہ ان کا نام پہلے ہی تجویز کیا جاچکا تھا۔

خیال رہے کہ 91 سالہ شیخ صباح الاحمد الصباح گزشتہ روز امریکا میں انتقال کرگئے تھے جہاں وہ علاج کے لیے رواں برس جولائی میں گئے تھے۔

رپورٹ کے مطابق شیخ صباح الاحمد کی نماز جنازہ کو صرف شاہی خاندان تک محدود رکھا جائے گا، کورونا کے باعث بڑا اجتماع نہیں ہوگا۔

نئے امیر 83 سالہ نواف الاحمد الصباح نے حلف اٹھانے کے بعد اپنے دفتر میں بات کرتے ہوئے کہا کہ خطے کے ممالک کی خوش حالی، استحکام اور سلامتی کے لیے کام کریں گے جس پر اراکین پارلیمنٹ نے ان سے بھرپور یک جہتی کا اظہار کیا۔

ایوان میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 'ہماری قوم کو آج مشکل حالات اور خطرناک چینلجز کا سامنا ہے، جن کو اتحاد اور مل کر کام کے ہی ختم کیا جاسکتا ہے'۔

دنیا بھر سے کویت کے امیر شیخ صباح الاحمد کو خراج عقیدت پیش کیا گیا، جو خطے میں خوش حالی اور امن کی کوششوں کے لیے بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے تھے اور مشرق وسطیٰ میں تنازعات کے حل کے لیے متحرک رہتے تھے۔

شیخ صباح نے آخری دن تک خلیجی ممالک کا تنازع حل کرنے کی کوشش جاری رکھی جبکہ نوے کی دہائی میں ان پر حملہ آور ہونے والے عراق سے بھی قریبی تعلقات بحال کردیے تھے۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ ان کے انتقال سے خطے کو رواں برس یہ دوسرا دھچکا لگا ہے، اس سے قبل عمان کے سلطان قابوس انتقال کرگئے تھے جو خطے میں توازن برقرار رکھنے کے لیے اپنا کردار ادا کرتے تھے۔

 
http://www.taghribnews.com/vdceof8eejh8fei.dqbj.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس