تاریخ شائع کریں۴ مهر ۱۳۹۹ گھنٹہ ۱۷:۵۴
خبر کا کوڈ : 476884

ٹائپ 2 ذیابیطس کے مریضوں کے لیے نئی انسولین ایجاد،

ڈنمارک کی ادویہ ساز کمپنی ’’نووو نورڈسک‘‘ نے ٹائپ 2 ذیابیطس کے مریضوں کے لیے ایک نئی انسولین ایجاد کر لی۔
ٹائپ 2 ذیابیطس کے مریضوں کے لیے نئی انسولین ایجاد،
ڈنمارک کی ادویہ ساز کمپنی ’’نووو نورڈسک‘‘ نے ٹائپ 2 ذیابیطس کے مریضوں کے لیے ایک نئی انسولین ایجاد کی ہے جسے ہفتے میں صرف ایک بار لگانا ہی کافی ہوگا۔ تاہم ابھی یہ آزمائشی مراحل پر ہے۔ اب اس بارے میں خبر ملی ہے کہ یہ ویکسین طبّی آزمائشوں کے دوسرے مرحلے (فیز ٹو کلینیکل ٹرائلز) میں کامیاب ہوگئی ہے۔ 

ان آزمائشوں کی تفصیل ’’نیو انگلینڈ جرنل آف میڈیسن‘‘ کے تازہ شمارے میں آن لائن شائع ہوئی ہے۔ مذکورہ طبّی آزمائشوں میں 247 رضاکار شریک ہوئے جو ٹائپ 2 ذیابیطس میں مبتلا تھے اور جنہیں روزانہ انسولین کے انجکشن لگوانے کی ضرورت تھی۔

ان میں سے تقریباً نصف کو ہفتے میں ایک بار یہ نئی انسولین بذریعہ انجکشن دی گئی جبکہ باقی نصف مریضوں کو معمول کے مطابق روایتی انسولین کے انجکشن دیئے جاتے رہے۔

26 ہفتے تک جاری رہنے والی ان آزمائشوں کے اختتام پر معلوم ہوا کہ نئی انسولین واقعتاً ایک ہفتے تک مؤثر رہی جبکہ اس کے ضمنی اثرات (سائیڈ ایفیکٹس) بھی روزانہ انجکشن کے ذریعے دی جانے والی انسولین سے مختلف نہیں تھے۔

نووو نورڈِسک کی نئی انسولین پر مشتمل علاج کو ’’انسولین آئیکوڈیک‘‘ کا نام دیا گیا ہے جس کی مزید اور حتمی آزمائشوں (فیز تھری کلینیکل ٹرائلز) کی تیاری شروع کردی گئی ہے۔

واضح رہے کہ ٹائپ 2 ذیابیطس کی ابتداء میں مریضوں کو خون میں گلوکوز کم کرنے والی دوائیں کھانی پڑتی ہیں۔ تاہم وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ جب مرض کی شدت میں اضافہ ہوتا ہے تو پھر انہیں روزانہ انسولین کے انجکشن لگوانے پڑتے ہیں جو ایک تکلیف دہ عمل ہے۔

یہ مسئلہ حل کرنے کےلیے نووو نورڈِسک نے چند سال پہلے انسولین کی ایک ایسی قسم (انسولین اینالاگ) دریافت کی تھی جو انسانی جسم میں پہنچنے کے بعد ایک ہفتے تک شوگر کو کنٹرول میں رکھ سکتی ہے۔

اگرچہ یہ نئی انسولین بھی انجکشن ہی کے ذریعے لی جاتی ہے لیکن ہفتے میں ایک بار لگوانے کی وجہ سے مریض کو مروجہ انسولین کے روزانہ انجکشن کے مقابلے میں بہت کم تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

توقع ہے کہ اس انسولین کی اگلی اور حتمی آزمائشیں اگلے سال کے اختتام تک مکمل ہوجائیں گی، جس کے بعد یہ 2022 تک فروخت کےلیے دستیاب ہوسکے گی۔
http://www.taghribnews.com/vdcg739ttak9u74.,0ra.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس