تاریخ شائع کریں۲۱ مرداد ۱۳۹۹ گھنٹہ ۱۶:۵۰
خبر کا کوڈ : 472274

بھارت کی معصوم کشمیری خاندان پر ظلم کی انتہا،

بھارت نے جھوٹے اور من گھڑت الزام لگا کر 3 کشمیری نوجوانوں کو پاکستانی قرار دے کر شہید کر دیا۔
بھارت کی معصوم کشمیری خاندان پر ظلم کی انتہا،
بھارت نے معصوم کشمیری خاندان پر ظلم کی انتہا کر دی، پاکستانی قرار دیتے ہوئے جھوٹے اور من گھڑت الزام لگا کر 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا تاہم ان نوجوانوں کے اہلخانہ نے سوشل میڈیا پر پوسٹ ہونیوالی تصاویر میں ان نوجوانوں کو شناخت کرلیا۔

شہید کشمیریوں کے اہلخانہ کا کہنا تھا کہ 18 سالہ ابرار کھٹانہ، 21 سالہ امتیاز احمد اور 25 سالہ ابرار احمد 16 جولائی کو کام کی تلاش میں سری نگر جانے کے لیے اپنے گھروں سے نکلے تھے، جس کے بعد ان سے رابطہ منقطع ہو گیا تھا۔

قابض بھارتی فوج نے کہا تھا کہ 3 نوجوان 18 جولائی کو جھڑپ کے دوران مارے گئے ہیں۔ ظالم قابض بھارتی فوج نے ان تینوں نوجوانوں کو قتل کرنے کے بعد خود ہی ان کی تدفین بھی کر دی تھی۔

خیال رہے کہ ان تین کشمیری نوجوانوں کو پاکستانی قرار دیکر بھارتی فوج نے شہید کردیا تھا اور بعد ازاں ان شہداء کی تصاویر سوشل میڈیا پر پوسٹ کردی گئیں۔ سوشل میڈیا پر تصاویر دیکھ کر ان نوجوانوں کے اہلخانہ کو علم ہوا کہ ان کے پیارے شہید کیے جا چکے ہیں۔

اہلخانہ ان تین شہید نوجوانوں کے ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہمیں انصاف اور اپنے پیاروں کا جسد خاکی چاہیے
http://www.taghribnews.com/vdcfe0djjw6de0a.k-iw.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس