تاریخ شائع کریں۱۲ تير ۱۳۹۹ گھنٹہ ۲۱:۳۳
خبر کا کوڈ : 467948

روس کی عوام نے آئینی ترامیم کے حق میں ووٹ دے دیا،

روسی عوام کا ولادی میر پیوٹن کے حق میں فیصلہ، 2036 تک صدر رہ سکیں گے۔
روس کی عوام نے آئینی ترامیم کے حق میں ووٹ دے دیا،
روس کے عوام نے آئینی ترامیم کے حق میں ووٹ دے دیا جس کے نتیجے میں صدر ولادی مری پیوٹن کی اپنے دور صدارت کو 2036 تک توسیع دینے کی راہ ہموار ہوگئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق غیر ملکی خبر رساں ایجنسی 'اے ایف پی' نے روس کے مرکزی الیکشن کمیشن کے حوالے سے کہا کہ چھ روز تک جاری ووٹنگ کے بعد 30 فیصد پولنگ اسٹیشنز کے سامنے آنے والے نتیجے کے مطابق 74 فیصد ووٹرز نے آئینی ترامیم کے حق میں ووٹ دیا۔

روسی پارلیمنٹ سے ان آئینی ترامیم کی کئی ہفتے قبل ہی منظوری دی جاچکی تھی اور نئے آئین کی نقول کتابوں کی دکانوں پر موجود تھیں۔ تاہم ولادی میر پیوٹن کا کہنا تھا کہ ان کی صدارت کو قانونی حیثیت دینے کے لیے عوام کی منظوری ضروری ہے۔

ان آئینی ترامیم میں کم از کم پینشن کی ضمانت اور ہم جنس افراد کی شادی پر مکمل پابندی جیسے قدامت پسند اور عوامی اقدامات شامل ہیں۔ تاہم ولادی میر پیوٹن نے ساتھ ہی دور صدارت کی حد میں بھی تبدیلی کردی جس کے بعد وہ 2024 میں اپنی چھ سالہ مدت ختم ہونے کے بعد مزید دو بار انتخاب میں حصہ لے سکیں گے۔

کریملن کی حکومت نے ووٹنگ کی حوصلہ افزائی کے لیے تمام رکاوٹیں ختم کردی تھیں اور ووٹنگ کے آخری روز عام تعطیل کا اعلان کیا گیا اور ووٹرز کو اپارٹمنٹس اور گاڑیوں سمیت دیگر انعامات کی پیشکش کی گئی۔
 
http://www.taghribnews.com/vdchkqnk623n-wd.4lt2.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس