تاریخ شائع کریں۷ خرداد ۱۳۹۹ گھنٹہ ۱۸:۳۰
خبر کا کوڈ : 464052

سعودی عرب میں قبائلی جنگ کا سلسلہ جاری/ چھ ہلاکتیں

سعودی عرب کے جنوب مغربی صوبے میں دو خاندانوں کے درمیان تنازع کے دوران فائرنگ کے تبادلے سے 6 افراد ہلاک ہوگئے۔ صوبہ اسیر میں فائرنگ کے واقعے میں لیفٹیننٹ کرنل زید الدباش سمیت دیگر 3 افراد زخمی بھی ہوئے
سعودی عرب میں قبائلی جنگ کا سلسلہ جاری/ چھ ہلاکتیں
سعودی عرب کے جنوب مغربی صوبے میں دو خاندانوں کے درمیان تنازع کے دوران فائرنگ کے تبادلے سے 6 افراد ہلاک ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کی رپورٹ میں پولیس ترجمان کے حوالے سے بتایا گیا کہ صوبہ اسیر میں فائرنگ کے واقعے میں لیفٹیننٹ کرنل زید الدباش سمیت دیگر 3 افراد زخمی بھی ہوئے۔

سرکاری خبر رساں ادارے سعودی پریس ایجنسی نے ترجمان کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا ہے کہ ہلاک ہونے والے تمام سعودی شہری ہیں اور پولیس نے اس جرم میں استعمال ہونے والا اسلحہ ضبط کرلیا ہے اور استغاثہ معاملے پر تحقیقات کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ پولیس اہلکار نے اس بات کا کوئی اشارہ نہیں دیا کہ فائرنگ کا یہ واقعہ دہشت گردی ہے۔

مقامی میڈیا نے بتایا کہ اس فائرنگ میں دو خاندان ملوث تھے حالانکہ ان کے درمیان تنازع کی وجہ واضح نہیں ہے۔ یہ واقعہ سعودی عرب کے صوبے اسیر کے علاقے ال امووا میں پیش آیا۔

خیال رہے کہ اپریل 2018 میں صوبہ عسير‎ میں چیک پوسٹ پر فائرنگ کے نتیجے میں 4 سیکیورٹی اہلکار ہلاک اور چار دیگر زخمی ہو گئے تھے۔

اس سے قبل 2017 میں جدہ میں شاہی محل کے باہر فائرنگ کے واقعے میں 2 سیکیورٹی گارڈز ہلاک اور 3 محافظ زخمی ہو گئے تھے۔

اس حوالے سے سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے کہا تھا کہ 28 سالہ شخص ڈرائیو کرتا ہوا جدہ کے 'السلام محل' کے دروازے تک پہنچا تھا اور سیکیورٹی پر تعینات محافظوں پر فائرنگ کی تھی۔

مذکورہ واقعے سے کچھ عرصہ قبل مشرقی شہر قطیف میں خود ساختہ بارودی سرنگ کے دھماکے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک اور 2 زخمی ہو گئے تھے۔

اس سے قبل 2015 میں سرکاری ٹیلی ویژن العریبیہ نے رپورٹ کیا تھا کہ سعودی عرب کے مشرقی علاقے میں مجلس پر مسلح شخص کی فائرنگ کے نتیجے میں5 افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوگئے تھے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس