تاریخ شائع کریں۲۴ ارديبهشت ۱۳۹۹ گھنٹہ ۲۳:۵۹
خبر کا کوڈ : 462500

روس اور چین نےکا سلامتی کونسل کے اجلاس کے بائیکاٹ

روس اور چین نےیورپ کی جانب سے شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال ہونے کے الزام پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس کا بائیکاٹ کیا۔
روس اور چین نےکا سلامتی کونسل کے اجلاس کے بائیکاٹ
شام کے ٹیلی ویژن چینل الخباریہ کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں روس کے سفیر واسیلی نبنزیا نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے منعقد ہونے والے سلامتی کونسل کے اجلاس میں روس اور چین کی شرکت نہ کرنے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ماسکو نے صاف اور شفاف طریقے سے تحقیات کا مطالبہ کیا ہے۔

اقوام متحدہ میں روس کے سفیرکا کہنا تھا کہ سلامتی کونسل میں یورپ اور اس کے اتحادیوں کی جانب سے شفافیت کے نعروں کے بر خلاف بند کمرے میں اجلاس منعقد کیا گیا جو روس کی نگاہ میں صحیح نہیں ہے۔ اس لئے کہ اس طرح کے اقدامات کیمیائی ہتھیاروں کے عدم پھیلاو کے سمجھوتے میں ملکوں کے اختیارات کو سلب کرنے کے مترادف ہیں۔

واضح رہے کہ امریکہ اور بعض یورپی ممالک نے شام کی فوج کی دہشتگردوں کے خلاف جاری آپریشن کا مقابلہ کرنے کے مقصد سے دمشق پر کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کا الزام عائد کرنے کا بہانہ بناتے ہوئے شام کے فوجی مراکز اور انفرا اسٹریکچرکو نشانہ بنایا۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس