تاریخ شائع کریں۸ ارديبهشت ۱۳۹۹ گھنٹہ ۱۵:۵۲
خبر کا کوڈ : 460444

اسپین: لاک ڈاؤن میں مزید نرمی, بچوں کو بھی باہر جانے کی اجازت

اسپین نے رواں ماہ کے آغاز کے بعد ہی لاک ڈاؤن کو نرم کرنے کا عندیہ دیا تھا اور 10 دن قبل ہی وہاں پر کچھ نرمیاں لائی گئی تھیں اور اب لاک ڈاؤن میں مزید نرمیاں لاتے ہوئے بچوں کو باہر نکلنے کی اجازت دے دی گئی
اسپین: لاک ڈاؤن میں مزید نرمی, بچوں کو بھی باہر جانے کی اجازت
کورونا وائرس سے متاثرہ یورپ کے بڑے ممالک میں سے ایک اسپین نے لاک ڈاؤن میں مزید نرمی کرتے ہوئے کم عمر بچوں کو بھی باہر جانے کی اجازت دے دی اور وہاں پر 27 اپریل کو پہلی بار 6 ہفتوں بعد بچے گھروں سے باہر نکلے۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق اسپین نے رواں ماہ کے آغاز کے بعد ہی لاک ڈاؤن کو نرم کرنے کا عندیہ دیا تھا اور 10 دن قبل ہی وہاں پر کچھ نرمیاں لائی گئی تھیں اور اب لاک ڈاؤن میں مزید نرمیاں لاتے ہوئے بچوں کو باہر نکلنے کی اجازت دے دی گئی۔

اسپین میں مارچ کے آغاز سے لاک ڈاؤن نافذ ہے اور وہاں پر تقریبا 5 ہفتے سخت لاک ڈاؤن رہا تھا، جس کے بعد وہاں لاک ڈاؤن میں نرمی لانے کا آغاز کیا گیا تھا۔

اسپین نے چند دن قبل جہاں کچھ کاروباری اداروں کو کھولنے کی اجازت دی تھی، وہیں حکومت نے 27 اپریل کو 14 سال سے کم عمر بچوں کو بھی گھر سے باہر نکلنے کی اجازت دے دی۔

حکومت کی جانب سے اجازت ملتے ہی 27 اپریل کو اسپین بھر میں لاکھوں بچے اپنے والدین اور دیگر اہل خانہ کے ہمراہ 6 ہفتوں بعد کھیلنے کے لیے باہر نکلے اور بچوں کو سائیکلنگ کرنے سمیت پارک میں کھیلنے کی اجازت بھی دی گئی ہے۔

حکومت نے بچوں اور ان کے اہل خانہ کو نرمیوں کے دوران سماجی فاصلوں کی ہدایات پر عمل کرنے کی تلقین بھی کر رکھی ہے۔

خیال رہے کہ اسپین میں 27 اپریل کی سہ پہر تک کورونا کے مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2 لاکھ 26 ہزار سے زائد ہو چکی تھی جب کہ وہاں ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 23 ہزار سے زائد ہو چکی تھی۔

مارچ کے آغاز سے لے کر وسط تک اسپین میں کورونا سے یومیہ 400 سے 700 تک ہلاکتیں ہوتی رہی تھیں، تاہم اپریل کے شروع ہوتے ہی وہاں پر ہلاکتوں میں کمی دیکھی گئی، جس کے بعد حکومت نے لاک ڈاؤن کو نرم کرنا شروع کیا۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس