تاریخ شائع کریں۹ فروردين ۱۳۹۹ گھنٹہ ۱۵:۴۴
خبر کا کوڈ : 456672

افغان حکومت کی 21 رکنی ٹیم طالبان کے ساتھ براہ راست مذاکرات کرے گی

افغان حکومت نے ملک میں تنازعات کے حل کیلیے طالبان کے ساتھ براہ راست مذاکرات کیلیے 21 رکنی ٹیم تشکیل دیدی ہے
افغانستان کی وزارت امن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ افغان حکومت نے ملک میں تنازعات کے حل کیلیے طالبان کے ساتھ براہ راست مذاکرات کیلیے 21 رکنی ٹیم تشکیل دیدی ہے۔
افغان حکومت کی 21 رکنی ٹیم  طالبان کے ساتھ براہ راست مذاکرات کرے گی
افغانستان کی وزارت امن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ افغان حکومت نے ملک میں تنازعات کے حل کیلیے طالبان کے ساتھ براہ راست مذاکرات کیلیے 21 رکنی ٹیم تشکیل دیدی ہے۔
 بین الاقوامی خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان کی وزارت امن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ افغان حکومت نے ملک میں تنازعات کے حل کیلیے طالبان کے ساتھ براہ راست مذاکرات کیلیے 21 رکنی ٹیم تشکیل دیدی ہے۔  افغان وزارت امن نے بیان میں کہا ہے کہ ٹیم کی سربراہی کاؤنٹر انٹیلی جنس کے سابق سربراہ محمد معصوم ستانکزی کریں گے۔ سیاسی جماعتوں سمیت معاشرے کے ہر طبقہ کے ساتھ مشاورت کرنے کے بعد کمیٹی کے ارکان کا انتخاب کیا گیا ہے، کمیٹی کو طالبان کے ساتھ مذاکرات کیلیے اسلامی جمہوریہ افغانستان کی نمائندگی کرنے کی ذمہ داری دی گئی ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس