تاریخ شائع کریں۲۴ دی ۱۳۹۸ گھنٹہ ۲۱:۰۵
خبر کا کوڈ : 448199

ناکام ایٹمی معاہدے کے بجائے اس کے نئے متبادل معاہدے کی حمایت کرنا چاہیے

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی میں کمی کی ضرورت پر زور دیا ہے۔
بورس جانسن نے ایران کے خلاف امریکہ کے مخاصمانہ اقدامات کی جانب کوئی اشارہ کیے بغیر کہا کہ اہم بات یہ ہے کہ مغربی ایشیا میں کشیدگی میں اضافہ نہ ہو
ناکام ایٹمی معاہدے کے بجائے اس کے نئے متبادل معاہدے کی حمایت کرنا چاہیے
برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی میں کمی کی ضرورت پر زور دیا ہے۔
بی بی سی ٹیلی ویژن کو انٹرویو دیتے ہوئے بورس جانسن نے ایران کے خلاف امریکہ کے مخاصمانہ اقدامات کی جانب کوئی اشارہ کیے بغیر کہا کہ اہم بات یہ ہے کہ مغربی ایشیا میں کشیدگی میں اضافہ نہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ نہ صرف یہ کہ مغربی ایشیا میں کشیدگی کو بڑھنے سے روکا جائے بلکہ اس میں کمی لائی جائے۔بورس جانسن نے مزید کہا برطانیہ کی خواہش ہے کہ ایران اور امریکہ کے درمیان جنگ نہ ہو۔انہوں نے دعوی کیا کہ سب کو ناکام ایٹمی معاہدے کے بجائے اس کے نئے متبادل معاہدے کی حمایت کرنا چاہیے۔ان کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب برطانیہ اور دیگر یورپی ممالک جامع ایٹمی معاہدے کو ایران کے ایٹمی معاہدے کے حوالے سے ایک موثر معاہدہ قرار دیتے رہے ہیں۔
http://www.taghribnews.com/vdceov8eojh8ezi.dqbj.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس