تاریخ شائع کریں۲۲ آبان ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۵:۰۳
خبر کا کوڈ : 442586

چلی میں مظاہرے پرتشدد ہنگاموں میں تبدیل ہوگئے

چلی میں پولیس کو مظاہرین کومنتشر کرنے کے لئے واٹر کینن کا استعمال کرنا پڑا۔
چلی میں حکومت مخالف مظاہرے جاری ہیں، سن تیاگو میں پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں ہوئیں جس کے دوران پولیس نے واٹر کینن کا استعمال کیا، حکام کے مطابق مظاہروں میں اب تک بیس افراد ہلاک اور دو ہزار سے زائد زخمی ہو چکے ہیں
چلی میں مظاہرے پرتشدد ہنگاموں میں تبدیل ہوگئے
چلی میں پولیس کو مظاہرین کومنتشر کرنے کے لئے واٹر کینن کا استعمال کرنا پڑا۔
چلی میں حکومت مخالف مظاہرے جاری ہیں، سن تیاگو میں پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں ہوئیں جس کے دوران پولیس نے واٹر کینن کا استعمال کیا، حکام کے مطابق مظاہروں میں اب تک بیس افراد ہلاک اور دو ہزار سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔
چلی میں مظاہرے کرایوں میں اضافے کے بعد شروع ہوئے تھے جو بعد ازاں پرتشدد ہنگاموں میں تبدیل ہو گئے۔ نامعلوم نقاب پوش افراد کی جانب سے سرکاری املاک کو نذر آتش کرنے اور لوٹ مار کے واقعات بھی پیش آئے۔  چلی کےصدر پنیرا نے بڑے پیمانے پر ہونے والے احتجاج کو ختم کرنے کیلئے کابینہ برطرف کرنے کا اعلان بھی کیا تھا تاہم مظاہرے تاحال جاری ہیں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس