تاریخ شائع کریں۱۸ آبان ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۹:۰۶
خبر کا کوڈ : 442193

اردوغان کے حوالے سے یورپی یونین کا رویہ ریاکارانہ ہے

شام کے صدر بشار اسد نے مغربی ملکوں کی جانب سے عائد کی جانے والی پابندیوں پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا
شام کے صدر بشار اسد نے مغربی ملکوں کی جانب سے عائد کی جانے والی پابندیوں پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ مغربی ممالک پابندیوں کے ذریعے شامی عوام کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔
اردوغان کے حوالے سے یورپی یونین کا رویہ ریاکارانہ ہے
شام کے صدر بشار اسد نے مغربی ملکوں کی جانب سے عائد کی جانے والی پابندیوں پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ مغربی ممالک پابندیوں کے ذریعے شامی عوام کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔
روس ٹیلی ویژن کو انٹرویو دیتے ہوئے صدر بشار اسد کا کہنا تھا کہ مغربی ملکوں کی توقع کے برخلاف شامی عوام نے بحران کے مختلف مرحلوں میں قانونی ملک کی حکومت کی حمایت اور دہشت گردوں کے خلاف جنگ کی ہے۔
صدر بشار اسد نے یورپی یونین اور ترک صدر کے درمیان تعلقات کے بارے میں کہا کہ اردوغان کے حوالے سے یورپی یونین کا رویہ ریاکارانہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ یورپی یونین کی مشکل یہ ہے کہ وہ ترک صدر سے ہراساں بھی ہے اور ساتھ اسے ان کی ضرورت بھی ہے۔
 شام کے صدر نے واضح کیا کہ یورپی ممالک ایک جانب بحران شام کے نتیجے میں ترکی میں پناہ لینے والے شامی شہریوں کی یورپ مہاجرت سے ڈرتے ہیں اور دوسری جانب شام میں لڑنے والے دہشت گردوں کی حمایت بھی کرتے ہیں۔ 
انہوں نے کا یورپ کو سب سے بڑا خطرہ ان ہزاروں دہشت گردوں سے لاحق جن کی وہ خود حمایت کر رہا ہے۔ صدر بشار اسد کا انٹرویو پیر کے روز رشیا ٹوڈے سے نشر کیا جائے گا۔ 
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس