تاریخ شائع کریں۱۸ آبان ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۸:۴۰
خبر کا کوڈ : 442190

ٹرمپ کا اٹارنی جنرل کے ذریعے خیراتی فنڈز کے ذاتی استعمال کا اعتراف کرلیا

مواخذے سے قبل نیویارک کی عدالت نے امریکی صدر پر2 ملین ڈالر کا جرمانہ عائد کیاہے
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے سے قبل  نیویارک کی عدالت میں صدر ٹرمپ کے خیراتی ادارے کے فنڈز کے غلط استعمال کیخلاف دائر درخواستوں پر سماعت ہوئی
ٹرمپ کا اٹارنی جنرل کے ذریعے خیراتی فنڈز کے ذاتی استعمال کا اعتراف کرلیا
مواخذے سے قبل نیویارک کی عدالت نے امریکی صدر پر2 ملین ڈالر کا جرمانہ عائد کیاہے۔
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے سے قبل  نیویارک کی عدالت میں صدر ٹرمپ کے خیراتی ادارے کے فنڈز کے غلط استعمال کیخلاف دائر درخواستوں پر سماعت ہوئی۔ صدر ٹرمپ نے اٹارنی جنرل کے ذریعے خیراتی فنڈز کے ذاتی استعمال کا اعتراف بھی کیا تھا جس پر جج سالیئن اسکارپُلا نے صدر پر جرمانہ عائد کردیا۔
جج نے اپنے فیصلے میں لکھا کہ ٹرمپ نے اپنے اعترافی بیان میں صدارتی انتخابات کے دوران اپنی مہم چلانے والی ٹیم کو اپنے ہی خیراتی ادارے ’ٹرمپ فاؤنڈیشن‘ کے ذریعے فنڈز اکٹھا کرنے کی ہدایت کی تھی جس کا غلط استعمال کیا گیا تاہم ٹرمپ نے نہ تو اس پر معذرت کی اور نہ ہی اس عمل کو غیر قانونی سمجھا۔
ادھرٹرمپ نے عدالتی فیصلے پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں امریکا کا واحد شخص ہوں جو نیویارک میں سب سے زیادہ امدادی کام کرتا ہے، میں نے چیئریٹی میں 19 ملین ڈالر خرچ کیے ہیں، یہ سیاسی انتقام ہے جس کا سلسلہ 4 سال سے جاری ہے۔
واضح رہے کہ نیویارک کے کئی ڈیموکریٹک اٹارنی جنرلز نے خیراتی ادارے ٹرمپ فاؤنڈیشن کے فنڈز کو ذاتی طور پر استعمال کرنے پر صدر ٹرمپ کے خلاف چندہ دینے والے افراد کی وساطت سے آئینی درخواستیں دائر کی تھیں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس