تاریخ شائع کریں۱۸ آبان ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۸:۲۰
خبر کا کوڈ : 442189

عمران خان کے استعفی تک دھرنا قائم رہے گا

اسلام آباد میں جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کی قیادت میں آزادی مارچ اور دھرنا جاری ہے
اسلام آباد سے موصولہ رپورٹ کے مطابق آزادی مارچ کے قائد اور جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ نے دھرنے سے خطاب میں ایک بار پھر عمران خان کے استعفے کے مطالبے پر زور دیا ہے
عمران خان کے استعفی تک دھرنا قائم رہے گا
اسلام آباد میں جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کی قیادت میں آزادی مارچ اور دھرنا جاری ہے۔
اسلام آباد سے موصولہ رپورٹ کے مطابق آزادی مارچ کے قائد اور جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ نے دھرنے سے خطاب میں ایک بار پھر عمران خان کے استعفے کے مطالبے پر زور دیا ہے انھوں نے اپنے اس مطالبے سے پسپائی نہ اختیار کرنے پر زور دیتے ہوئے حکومتی مذاکرات ٹیم کے ارکان سے کہا ہے کہ اب ان کے پاس مذاکرات کے لئے آئیں تو استعفی لے کے آئیں۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان قبضہ گروپ کے لئے نہیں بنا ہے۔ انھوں نے کہا کہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی نہ تو ان کی بات سمجھتی ہے اور نہ ہی اس کے اندر ان کی پوری بات عمران خان تک پہنچانے کی جرائت ہے۔ 
مولانان فضل الرحمن نے قومی اسمبلی میں حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے سربراہ وزیر دفاع پرویز خٹک کی تقریر کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کی اس تقریر نے ثابت کردیا ہے کہ وہ مفاہمت کے جذبے سے عاری ہیں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس