تاریخ شائع کریں۱۶ آبان ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۹:۰۹
خبر کا کوڈ : 442021

امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشترکہ فوجی مشقیں اشتعال انگیز ہیں

شمالی کوریا نے آئندہ مہینے جنوبی کوریا کے ساتھ امریکہ کی مشترکہ فوجی مشقوں کے انعقاد کے پروگرام پر تنقید کی ہے
شمالی کوریا نے آئندہ مہینے جنوبی کوریا کے ساتھ امریکہ کی مشترکہ فوجی مشقوں کے انعقاد کے پروگرام پر تنقید کی ہے
امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشترکہ فوجی مشقیں اشتعال انگیز ہیں
شمالی کوریا نے آئندہ مہینے جنوبی کوریا کے ساتھ امریکہ کی مشترکہ فوجی مشقوں کے انعقاد کے پروگرام پر تنقید کی ہے
فرانس پریس کی رپورٹ کے مطابق بدھ کو شمالی کوریا کی وزارت خارجہ کے ایک سینئر عہدیدار کوان جونگ گون نے کہا ہے کہ جنوبی کوریا کے ساتھ مشترکہ مشقوں کے انعقاد کے امریکی فیصلے کا مطلب پیونگ یانگ کا مقابلہ کرنا ہے اور یہ پالیسی ممکن ہے سفارتکاری کو خطرے میں ڈال دے۔جونگ گونگ نے مزید کہا کہ پیونگ یانگ نے مختلف مرحلوں میں تاکید کی ہے کہ امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشترکہ فوجی مشقیں اس بات کا باعث ہوں گی کہ شمالی کوریا نے پہلے جو اہم قدم اٹھائے ہیں ان پر نظرثانی کرے گا۔شمالی کوریا کی وزارت خارجہ کے ایک اعلی عہدیدار نے انتباہ دیا ہے کہ پیونگ یانگ کا پیمانہ صبر لبریز ہو رہا ہے۔صحافتی ذرائع نے آئندہ مہینے سئول اور واشنگٹن کی مشترکہ فوجی مشقوں کی خبر دی ہے۔جنوبی کوریا کے ساتھ امریکہ کی فوجی مشقیں شروع کرنے کی کوششوں کا مطلب یہ ہے کہ شمالی کوریا کے ساتھ واشنگٹن کے مذاکرات نتیجہ خیز نہیں ہوئے ہیں کیونکہ جون دوہزار اٹھارہ میں سینگاپور میں امریکہ اور شمالی کوریا کے سربراہوں کی پہلی ملاقات کے بعد واشنگٹن نے اعلان کیا تھا کہ وہ جنوبی کوریا کے ساتھ مشترکہ فوجی مشقیں روک دےگا۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس