تاریخ شائع کریں۱۶ آبان ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۳:۱۸
خبر کا کوڈ : 442005

چوہدری پرویز الہیٰ نے مولانا فضل الرحمان کی رہائش گاہ پر ان سے ملاقات

حکومتی مذاکراتی کمیٹی نے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویزالٰہی کو مولانا فضل الرحمان سے بات چیت کا مکمل اختیار دے دیا۔
حکومتی مذاکراتی کمیٹی نے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویزالٰہی کو مولانا فضل الرحمان سے بات چیت کا مکمل اختیار دے دیا۔
چوہدری پرویز الہیٰ نے مولانا فضل الرحمان کی رہائش گاہ پر ان سے ملاقات
حکومتی مذاکراتی کمیٹی نے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویزالٰہی کو مولانا فضل الرحمان سے بات چیت کا مکمل اختیار دے دیا۔
بدھ کی شام اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہیٰ نے مولانا فضل الرحمان کی رہائش گاہ پر ان سے ملاقات کی۔ ذرائع کے مطابق چوہدری برادران کی مولانا فضل الرحمان سے ملاقاتوں میں حکومت اور رہبر کمیٹی کی تجاویز کی روشنی میں ایک معاہدہ تشکیل دیے جانے پر گفتگو ہوئی۔
حکومت کی جانب سے معاہدے میں مولانا فضل الرحمان کو اعلیٰ سطح کی ٹھوس ضمانت دینے کی پیشکش کی گئی ہے جس کا مولانا فضل الرحمان کی جانب سے مثبت جواب دیا گیا ہے۔
جمعیت علمائے اسلام (ف) کے ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومتی مذاکراتی ٹیم کے ساتھ مذاکرات میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی لیکن امید ہے کہ چوہدری برادران مولانا فضل الرحمان کو قائل کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔
دوسری جانب اسلام آباد میں آزادی مارچ کے خاتمے کے لیے حکومتی مذاکراتی کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ جس میں مولانا فضل الرحمان اور رہبر کمیٹی سے ہونے والے مذاکرات پر مشاورت ہوئی۔ مذاکراتی کمیٹی نے پرویز الہی کو فضل الرحمان سے بات چیت کا مکمل اختیار دے دیا۔
حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے اجلاس سے قبل  مسلم لیگ (ق) کے رہنما چوہدری پرویز الہٰی مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کے لیے ان کی رہائش گاہ پہنچے جہاں آزادی مارچ کے خاتمے سے متعلق معاملے پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔
ملاقات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے پرویز الہیٰ نے کہا کہ مثبت پیش رفت ہورہی ہے اور اس وقت کئی چیزیں ساتھ ساتھ چل رہی ہیں، اس سلسلے میں تھوڑا صبر اور محنت کی ضرورت ہے، ایسا اس لیے ہو رہا ہے کہ مثبت طریقے سے معاملے منطقی انجام کو پہنچے۔
واضح رہے کہ چوہدری برادران مسلسل وزیراعظم اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان رابطہ کاری میں مصروف ہیں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس