تاریخ شائع کریں۸ آبان ۱۳۹۸ گھنٹہ ۲۱:۰۰
خبر کا کوڈ : 441355

یمن میں سعودی عرب کے بھیانک جرائم انجام دے رہا ہے

رکی کے وزیر خارجہ مولود چاوش اوغلو نے الجزیرہ کے ساتھ گفتگو میں کہا
ترکی کے وزیر خارجہ مولود چاوش اوغلو نے یمن میں سعودی عرب کے بھیانک جرائم کی طرف اشارہ رکتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب کو یمن میں جنگی جرائم کے ارتکاب کے بارے میں جوابدہ ہونا چاہیے۔
یمن میں سعودی عرب کے بھیانک جرائم انجام دے رہا ہے
ترکی کے وزیر خارجہ مولود چاوش اوغلو نے یمن میں سعودی عرب کے بھیانک جرائم کی طرف اشارہ رکتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب کو یمن میں جنگی جرائم کے ارتکاب کے بارے میں جوابدہ ہونا چاہیے۔
بین الاقوامی خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ترکی کے وزیر خارجہ مولود چاوش اوغلو نے الجزیرہ کے ساتھ گفتگو میں  یمن میں سعودی عرب کے بھیانک جرائم کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب کو یمن میں جنگی جرائم کے ارتکاب کے بارے میں جوابدہ ہونا چاہیے۔ چآوش اوغلو نے کہا کہ سعودی عرب نے صحافی جمال خاشقجی کے بہیمانہ قتل کو چھپانے کی ہر ممکن کوشش کی ۔ لیکن ہم نے سعودی عرب کو خاشقجی کے قتل کا اعتراف کرنے پر مجبور کردیا اور خاشقجی کے قتل کو چھپانے کے سلسلے میں سعودی عرب کےتمام گھناؤنی منصوبوں کو ناکام بنادیا۔ چاوش اوغلو نے کہا کہ سعودی عرب کو یمن پر مسلط کردہ جنگ میں بھیانک جرائم کے بارے میں جواب دینا چاہیے اور عالمی برادری کو سعودی عرب کے خوفناک جرائم پر خاموش نہیں رہنا چاہیے۔ چاوش اوغلو نے کہا کہ سعودی اور اماراتی ہم پر اس لئے ناراض ہیں کیونکہ ہم ان سے زیادہ اسلام پر عمل کرتے ہیں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس