تاریخ شائع کریں۲۲ مهر ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۶:۴۷
خبر کا کوڈ : 440019

امریکی پالیسیوں سے نجات کی صورت میں ہی دنیا میں امن قائم ہوسکتا ہے

ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے شمالی شام سے امریکی فوجیوں کے انخلا کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے
ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے شمالی شام سے امریکی فوجیوں کے انخلا کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے
امریکی پالیسیوں سے نجات کی صورت میں ہی دنیا میں امن قائم ہوسکتا ہے
ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے شمالی شام سے امریکی فوجیوں کے انخلا کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ مغربی ایشیا کا علاقہ امریکہ کے بغیر زیادہ پرامن ہوگا۔
اپنے ذاتی ٹوئٹ پر تحریر کیے جانے والے ایک پیغام میں علی شمخانی کا کہنا تھا کہ امریکہ کو مشرق وسطی میں آنا ہی نہیں چاہیے تھا۔ان کا کہنا تھا کہ امریکی حکام نے پچھلے دو ماہ کے دوران جو بیانات دیئے ہیں ان میں مغربی ایشیا میں اپنی فوجی موجودگی کے احمقانہ ہونے کا اعتراف  کیا گیا ہے۔
ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے کہا کہ مشرق وسطی کی تقسیم، سینچری ڈیل، ایران میں حکومت کی تبدیلی کی خام خیالی، سعودی عرب کو علاقے کا تھانیدار بنانے کا منصوبہ، جنگ یمن، افغانستان میں نام نہاد امن کے قیام اور بحران شام جیسی تمام امریکی سازشیں بری طرح ناکام ہوچکی ہیں۔انہوں نے کہا کہ امریکی حکام کو اچھی طرح  معلوم ہوگیا ہے کہ ان کے پاس اب سپر پاور والی طاقت نہیں ہے اور پہلے والی پوزیشن پر واپس جانا امریکہ کے لیے ناممکن ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس