تاریخ شائع کریں۲۲ مهر ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۶:۴۵
خبر کا کوڈ : 440018

دنیا امریکہ کے ناجائز اقدامات پر خاموش تماشائی نہ بنے

ن کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ شامی مسائل کا حل فوجی نہیں
ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ شامی مسائل کا حل فوجی نہیں، ہم نے شام اور یمن میں جنگ کے آغاز سے پہلے سیاسی مذاکرات کی تجویز دی مگر بعض ممالک جنگ کے خواہاں تھے.
دنیا امریکہ کے ناجائز اقدامات پر خاموش تماشائی نہ بنے
ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ شامی مسائل کا حل فوجی نہیں، ہم نے شام اور یمن میں جنگ کے آغاز سے پہلے سیاسی مذاکرات کی تجویز دی مگر بعض ممالک جنگ کے خواہاں تھے.
اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکرعلی لاریجانی نے اتوار کے روز سربیا کے دارالحکومت بلغراد میں 141ویں عالمی بین الپارلیمانی یونین کے اجلاس (IPU) کے موقع پر اپنی الجیریائی ہم منصب "سلیمن شینین" کے ساتھ ہونے والی ملاقات کے دوران امریکی بد عہدی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ بات بہت ہی خطرناک ہے کہ دوسرے ممالک امریکہ کے تمام اقدامات کا نظارہ کر رہے ہیں اور ان کی سیاسی حمایت کر رہے ہیں اور یورپ  اپنے وعدوں پر عملدرآمد نہیں کر رہا ہے.
اس موقع پرالجیریائی اسپیکر نے دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی اور تجارتی تعلقات بڑھانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہم فلسطین میں امریکی پالیسیوں کے مخالف ہیں اور فلسطینی عوام کے ساتھ کھڑے رہیں گے.
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس