تاریخ شائع کریں۲۰ مهر ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۴:۵۰
خبر کا کوڈ : 439793

بن سلمان کی درخواست پر مزید 3000 امریکی فوجی سعودی عرب بھیجے جایئں گے

امریکا سعودی عرب کے لیے فوجیوں کے ساتھ ساتھ کئی اقسام کے فوجی سازوسامان بھی روانہ کر رہا ہے
سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو فوج کی باضابطہ تعیناتی کی اطلاع دی ہے اور سعودی دفاع کو مضبوط بنانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ اس طرح ریاست میں مزید 3000 افواج بھیجی جائیں گی۔
بن سلمان کی درخواست پر مزید 3000 امریکی فوجی سعودی عرب بھیجے جایئں گے
امریکا سعودی عرب کے لیے فوجیوں کے ساتھ ساتھ کئی اقسام کے فوجی سازوسامان بھی روانہ کر رہا ہے۔
پینٹاگون سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق سعودی عرب میں مزید فوجی بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ امریکی وزیرِ جنگ مارک ایسپر نے ساتھ ہی میزائل شکن پیٹریاٹ نظام کی دو بیٹریاں، ایک عدد ٹی ایچ اے اے ڈی بیلیسٹک میزائل انٹرسیپشن سسٹم ، دو فلائٹ اسکواڈرن اور ایک ایئر ایکسپیڈیشنری ونگ بھیجنے کا اعلان بھی کیا ہے۔
پینٹاگون کے بیان میں کہا گیا ہے کہ اس ضمن میں امریکی وزیرِ جنگ نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو فوج کی باضابطہ تعیناتی کی اطلاع دی ہے اور سعودی دفاع کو مضبوط بنانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ اس طرح ریاست میں مزید 3000 افواج بھیجی جائیں گی۔
امریکی محکمہ جنگ کے مطابق 3000 افواج کی تعیناتی سے خطے میں اس کی افواج کی تعداد 14000 تک پہنچ چکی ہے اور اسے سینٹرل کمانڈ ایریا کا نام دیا گیا ہے۔
واضح رہے کہ محمد بن سلمان نے خود امریکا سے فوجی بھیجنے کی درخواست کی تھی۔
ایک ماہ قبل سعودی عرب میں تیل کی اہم تنصیبات پر میزائلوں سے حملہ کیا گیا تھا جس کا الزام ایران پر عائد کیا گیا تھا تاہم ایران نے ان الزامات کی تردید کی تھی۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس