تاریخ شائع کریں۱۸ شهريور ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۴:۳۱
خبر کا کوڈ : 436783

ایران ایٹمی معاہدے کو ابھی بھی بچایا جاسکتا ہے

ہمیں اس مسئلے کے حل کیلئے سیاسی اور پُرامن طریقوں کو ہاتھ سے نہیں جانے دینا چاہیے
جرمنی کے وزیر خارجہ نے جوہری معاہدے پر ایران کے تیسرے قدم کے رد عمل میں کہا ہے کہ ابھی بھی کوئی حل نکالنے کیلئے وقت باقی ہے تاہم یورپ کے بس میں نہیں کہ اسے اکیلا انجام دے
ایران ایٹمی معاہدے کو ابھی بھی بچایا جاسکتا ہے
جرمنی کے وزیر خارجہ نے جوہری معاہدے پر ایران کے تیسرے قدم کے رد عمل میں کہا ہے کہ ابھی بھی کوئی حل نکالنے کیلئے وقت باقی ہے تاہم یورپ کے بس میں نہیں کہ اسے اکیلا انجام دے۔
جرمنی کے وزیر خارجہ ہائیکو ماس نے کہا کہ ہمیں اس مسئلے کے حل کیلئے سیاسی اور پُرامن طریقوں کو ہاتھ سے نہیں جانے دینا چاہیے۔
جرمن وزیر خارجہ نے اس امید کا اظہار کیا کہ ابھی بھی کوئی حل نکالنے کیلئے وقت باقی ہے تا ہم یورپ کے بس میں نہیں کہ اسے اکیلا انجام دے۔
ان کے مطابق جوہری معاہدہ کوئی یکطرفہ سڑک نہیں ہے۔
واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے حالیہ دنوں میں جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی اور اس کے نفاذ میں یورپی فریقین کی وعدہ خلافی کے جواب میں وعدوں کی معطلی کا تیسرا قدم اٹھایا جس کے مطابق اب جوہری ترقی اور ریسرچ کے حوالے سے ایران کسی وعدے کا پابند نہیں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس