تاریخ شائع کریں۱۰ شهريور ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۴:۴۳
خبر کا کوڈ : 435975

کشمیر پاکستان اور ہندوستان کے درمیان عالمی سطح پر تسلیم شدہ مسئلہ ہے

اسلامی تعاون کی تنظیم نے کرفیو ختم کر کے مواصلاتی نظام کی فوری بحالی کا مطالبہ کیا ہے۔
دنیا بھر کے 57 مسلم اکثریتی ممالک کے درمیان باہمی تعاون کی عالمی تنظیم ’او آئی سی‘ نے کشمیری عوام کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے
کشمیر پاکستان اور ہندوستان کے درمیان عالمی سطح پر تسلیم شدہ مسئلہ ہے
اسلامی تعاون کی تنظیم نے کرفیو ختم کر کے مواصلاتی نظام کی فوری بحالی کا مطالبہ کیا ہے۔
دنیا بھر کے 57 مسلم اکثریتی ممالک کے درمیان باہمی تعاون کی عالمی تنظیم ’او آئی سی‘ نے کشمیری عوام کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر پاکستان اور ہندوستان کے درمیان عالمی سطح پر تسلیم شدہ دو طرفہ مسئلہ ہے جس پر ہندوستان یک طرفہ طور پر کوئی فیصلہ نہیں کرسکتا۔
اسلامی تعاون کی تنظیم کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان کی جانب سے یک طرفہ طور پر آرٹیکل 370 اور 35-اے کو منسوخ کر کے کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرنے کا فیصلہ عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہے۔ ہندوستان سے 25 روز سے جاری مسلسل کرفیو کو ختم کرکے مواصلاتی نظام کو بحال کرنے مطالبہ کرتے ہیں۔
اسلامی تعاون کی تنظیم نے کہا ہے کہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے پر تحفظات ہیں مسئلہ کشمیر کا حل طاقت میں نہیں بلکہ اقوام متحدہ کی قرار دادوں میں ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس