تاریخ شائع کریں۹ شهريور ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۴:۰۹
خبر کا کوڈ : 435849

آل خلیفہ، اسرائیل کی غرق ہونے والی کشتی میں سوار ہونا چاہتی ہے

جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کے بین الاقوامی امور کے مشیر حسین امیر عبداللہیان نے کہا
اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کے بین الاقوامی امور کے مشیر نے کہا ہے کہ بحرین کی آل خلیفہ حکومت اسرائیل کی غرق ہونے والی اور ٹوٹی ہوئی کشتی پتر سوار ہوگئے ہیں
آل خلیفہ، اسرائیل کی غرق ہونے والی کشتی میں سوار ہونا چاہتی ہے
اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کے بین الاقوامی امور کے مشیر نے کہا ہے کہ بحرین کی آل خلیفہ حکومت اسرائیل کی غرق ہونے والی اور ٹوٹی ہوئی کشتی پتر سوار ہوگئے ہیں۔
بین الاقوامی خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کے بین الاقوامی امور کے مشیر حسین امیر عبداللہیان نے کہا ہے کہ بحرین کی آل خلیفہ حکومت اسرائیل کی غرق ہونے والی اور ٹوٹی ہوئی کشتی پتر سوار ہوگئے ہیں۔
امیر عبداللہیان نے کہا کہ بحرین کے وزیر خارجہ نے اسرائیل کی ترجمانی کرتے ہوئے 4 عرب ممالک عراق، لبنان شام اور یمن پر اسرائیل کے حملوں کی حمایت کی۔ انھوں نے کہا کہ آل خلیفہ کی حکومت کا بحرینی عوام کے ساتھ اتنا زیادہ فاصلہ ہوگیا ہے کہ بحرین کی آل حکومت اپنی نجات کے لئے اسرائیل کی ٹوٹی ہوئی اور ڈوبنے والی کشتی پر سوار ہوگئی ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس