تاریخ شائع کریں۲۷ تير ۱۳۹۸ گھنٹہ ۲۳:۳۹
خبر کا کوڈ : 430213

امریکہ اپنے ایٹمی ہتھیار بلجیم سے منتقل کرے, مظاہرین کا احتجاج

بیلجیئم کی سیاسی جماعتوں نے اپنے ملک میں نصب امریکی ہتھیاروں کو واپس نکالنے کا مطالبہ کیا ہے
بیلجیئم کی گرین پارٹی اور سوشلسٹ پارٹی دونوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے ملک میں نصب امریکی ہتھیاروں کو فوری طور پر ملک سے باہر منتقل کرے
امریکہ اپنے ایٹمی ہتھیار بلجیم سے منتقل کرے, مظاہرین کا احتجاج
بیلجیئم کی سیاسی جماعتوں نے اپنے ملک میں نصب امریکی ہتھیاروں کو واپس نکالنے کا مطالبہ کیا ہے۔
بیلجیئم کی گرین پارٹی اور سوشلسٹ پارٹی دونوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے ملک میں نصب امریکی ہتھیاروں کو فوری طور پر ملک سے باہر منتقل کرے ۔دونوں جماعتوں نے یہ مطالبہ اس انکشاف کے بعد کیا ہے  کہ بہت سے امریکی ہتھیار بیلجیم سمیت بعض یورپی ملکوں میں نصب کیے گئے ہیں۔گرین پارٹی کے رکن پارلیمنٹ سموئل کوگولاتی نے کہا کہ غیر متوقع پر طور پر فاش ہونے والی اطلاعات سے یہ راز کھل گیا ہے کہ یورپ کے اتحادی نے عام تباہی پھیلانے والے ہتھیار بیلجیئم میں نصب کر رکھے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ٹرمپ جیسے شخص  کے ہوتے ہوئے ہم اپنی سرزمین پر عام تباہی پھیلانے والے امریکی ہتھیار نصب ہونے  کے متحمل نہیں ہوسکتے۔حال ہی میں منظر عام پر آنے والے نیٹو کی ایک دستاویز کے مطابق امریکہ کے بہت سے ایٹمی ہتھیار بیلجیم کے دارالحکومت برسلز سے نوے کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ایک ایئر بیس میں نصب ہیں۔اس دستاویز کے مطابق امریکہ کے  ایک سو پچاس ایٹم بم چند یورپی ملکوں اور ترکی کی فوجی چھاونی میں موجود ہیں ۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس