تاریخ شائع کریں۲۰ تير ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱:۱۲
خبر کا کوڈ : 429092

لیبیا میں فرقین جنگ بندی کا اعلان کریں

یواین ایس ایم آئی ایل نے لیبیا کے جنوبی علاقے میں قبائلی تصادم کے پیش نظر یہ اپیل کی ہے
اقوام متحدہ کے مشن نے ایک بیان میں کہا یواین ایس ایم آئی ایل شہر مرزوق میں موجودہ جنگ جیسی صورتحال کی وجہ سے بہت پریشان ہے جس کی وجہ سے بہت سی اموات ہوئی ہیں
لیبیا میں فرقین جنگ بندی کا اعلان کریں
یواین ایس ایم آئی ایل نے لیبیا کے جنوبی علاقے میں قبائلی تصادم کے پیش نظر یہ اپیل کی ہے۔
لیبیا میں اقوام متحدہ مشن (یواین ایس ایم آئی ایل ) نے ملک کے جنوبی حصے میں فوری طور پر جنگ ختم کرنے کی اپیل کی ہے۔
یواین ایس ایم آئی ایل نے لیبیا کے جنوبی علاقے میں قبائلی تصادم کے پیش نظر یہ اپیل کی ہے۔
اقوام متحدہ کے مشن نے ایک بیان میں کہا یواین ایس ایم آئی ایل شہر مرزوق میں موجودہ جنگ جیسی صورتحال کی وجہ سے بہت پریشان ہے جس کی وجہ سے بہت سی اموات ہوئی ہیں۔
فرانس پریس کی رپورٹ کے مطابق آئی او ایم نے جمعے کے روز ایک رپورٹ میں صراحت کے ساتھ کہا ہے کہ لیبیا کے دارالحکومت طرابلس پر اپریل کے مہینے میں جنرل خلیفہ حفتر کی فوج کے حملوں کے آغاز سے اب تک تقریبا ایک ہزار افراد مارے جا چکے ہیں۔مذکورہ  تنظیم کے مطابق مشرقی لیبیا میں تارکین وطن کے کیمپ پر کئے جانے والے فضائی حملے میں ترپن افراد ہلاک ہوئے ہیں۔یہ حملہ جنرل خلیفہ حفتر کی نیشنل آرمی سے موسوم گروہ سے وابستہ جنگی طیاروں نے کیا تھا۔اس سے قبل اعلان کیا گیا تھا کہ اس حملے میں چالیس افراد ہلاک اور سو دیگر زخمی ہوئے ہیں تاہم اب مہاجروں کے امور سے متعلق بین الاقوامی تنظیم  آئی او ایم نے اعلان کیا ہے کہ ہلاک ہونے والوں کی تعداد ترپن ہو گئی ہے۔
واضح رہے کہ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور مصر و لیبیا میں جنرل خلیفہ حفتر کی فوج کی حمایت کر رہے ہیں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس