تاریخ شائع کریں۲۵ خرداد ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۴:۱۵
خبر کا کوڈ : 424953

پاکستان افغان امن عمل میں امریکا کی مدد کررہا ہے

پاکستان نے ایک مرتبہ پھرامریکی پالیسی پر کڑی نکتہ چینی کی ہے ۔
پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کرغزستان کے دارالحکومت بشکیک میں امریکی پالیسی پرتنقید کرتے ہوئے کہا ہےکہ پاکستان افغان امن عمل میں امریکا کی مدد کررہا ہے
پاکستان افغان امن عمل میں امریکا کی مدد کررہا ہے
پاکستان نے ایک مرتبہ پھرامریکی پالیسی پر کڑی نکتہ چینی کی ہے ۔
پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کرغزستان کے دارالحکومت بشکیک میں امریکی پالیسی پرتنقید کرتے ہوئے کہا ہےکہ پاکستان افغان امن عمل میں امریکا کی مدد کررہا ہے،پاکستان کے مثبت رویے پر امریکا بھی مثبت ردعمل کا مظاہرہ کرے۔
پاکستان کے وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ امریکا کو چاہیے کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں ہماری قربانیوں کااعتراف کرے۔
انہوں نے کہا کہ امریکی وزیرخارجہ سےملاقات میں آئی ایم ایف معاہدے ، ایف اے ٹی ایف پر بات ہوگی جبکہ انہیں ایف اے ٹی ایف سےمتعلق اقدامات سے بھی آگاہ کیا جائے گا۔
وزیر خارجہ نے کہا کہ عمران خان اور روسی صدرکے درمیان پاک روس دو طرفہ تعاون پر بہت مثبت گفتگو ہوئی جبکہ روسی صدر سے ڈیڑھ گھنٹے سےزائد ملاقات میں افغانستان اورخلیج فارس کی صورتحال پر بات ہوئی۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ایسانہیں ہوتا کہ روس کے ساتھ تعلقات سے کسی اورملک سے تعلقات خراب ہوں۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس