تاریخ شائع کریں۲۳ ارديبهشت ۱۳۹۸ گھنٹہ ۲۱:۲۵
خبر کا کوڈ : 419924

امریکہ اپنی مرضی کی بنیادوں پر مذکرات چاہتا ہے

قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے سربراہ حشمت اللہ فلاحت پیشہ نے کہا
ایران کی پارلیمنٹ کے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے سربراہ نے کہا ہے کہ امریکہ ایران کے خلاف نفسیاتی جنگ تیز کرنے کی کوشش کر رہا ہے
امریکہ اپنی مرضی کی بنیادوں پر مذکرات چاہتا ہے
ایران کی پارلیمنٹ کے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے سربراہ نے کہا ہے کہ امریکہ ایران کے خلاف نفسیاتی جنگ تیز کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔
ایران کی پارلیمنٹ کے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے سربراہ حشمت اللہ فلاحت پیشہ نے اتوار کے روز پارلیمنٹ کے کھلے اجلاس کے موقع پر تہران کے ساتھ مذاکرات کے لئے واشنگٹن کی آمادگی پر مبنی امریکی صدر ٹرمپ کے بیان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کے ساتھ مذاکرات کی خاص شرطیں ہیں اس لئے کہ اسلامی انقلاب کے بعد ایران نے ایک بار جوہری شعبے میں امریکہ کے ساتھ سنجیدہ مذاکرات کئے مگر امریکہ یکطرفہ طور پر پیچھے ہٹ گیا اور مذاکرات کا کوئی نتیجہ برآمد نہ ہوا۔
انھوں نے کہا کہ ایران ہار جیت کے مذاکرات میں شامل نہیں ہو گا جبکہ ایران بحران بھی نہیں بڑھانا چاہتا اور اس کا خیال ہے کہ مستقبل میں امریکیوں کا موقف مزید کمزور ہو گا۔
انھوں نے کہا کہ ایران کی حکمت عملی امریکہ کے مقابلے میں دفاع اور اسے برابر کی ٹکر دینا ہے اور ایران نے گذشتہ برسوں کے دوران امریکی دشمنی کو سجھتے ہوئے ہی پوری دفاعی تیاری کی ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس