تاریخ شائع کریں۲۵ فروردين ۱۳۹۸ گھنٹہ ۱۶:۳۰
خبر کا کوڈ : 414692

فرانس میں سرمایہ دارانہ نظام کے خلاف مظاہرے جاری

یلوجیکٹ تحریک کے حامیوں نے ہفتے کو ایک بار پھراحتجاجی مظاہرہ کیا
فرانس کے ذرائع ابلاغ نے خبردی ہے کہ یلوجیکٹ تحریک کے حامیوں نے بائیسویں ہفتے بھی سرمایہ دارانہ نظام کے خلاف پیرس کی سڑکوں پر مظاہرہ کیا ہے
فرانس میں سرمایہ دارانہ نظام کے خلاف مظاہرے جاری
فرانس کے ذرائع ابلاغ نے خبردی ہے کہ یلوجیکٹ تحریک کے حامیوں نے بائیسویں ہفتے بھی سرمایہ دارانہ نظام کے خلاف پیرس کی سڑکوں پر مظاہرہ کیا ہے ۔
فرانسیسی ذرائع ابلاغ نے خبردی ہے کہ یلوجیکٹ تحریک کے حامیوں نے ہفتے کو ایک بار پھراحتجاجی مظاہرہ کیا-
مظاہرین نے سرمایہ دارانہ نظام  اور صدر میکرون کے خلاف شدید نعرے لگائے -
پیرس کے ساتھ ساتھ بوردو ، دیژون ، کان اور مون پلیہ شہروں میں بھی احتجاجی مظاہرے کئے گئے -
فرانس کے ایل سی ای ٹیلی ویژن چینل نے بھی خبردی ہے کہ بائیسویں ہفتے بھی یلوجیکٹ تحریک کے حامیوں نے فرانس کے مختلف  شہروں کی سڑکوں پر نکل کر سرمایہ دارانہ نظام اور صدر میکرون کی اقتصادی اصلاحات کی پالیسیوں کے خلاف مظاہرے کئے -
فرانس کی وزارت داخلہ کی اعداد وشمار کے مطابق ان احتجاجی مظاہروں کے آغاز سے اب تک تقریبا دس افراد ہلاک اور تین ہزار تین سو زخمی ہوچکے ہیں - 
واضح رہے کہ سترہ نومبر سے صدر میکرون کی پالیسیوں پر عوامی احتجاج کیا جا رہا ہے اور قابو پانے کے لیے فرانسیسی صدر کی جانب سے پندرہ جنوری سے دو ماہ پر مشتمل ملک گیر بحث کرانے کے اعلان کے باوجود احتجاج کا یہ سلسلہ بدستور جاری ہے اور لوگ صدر میکرون کے استعفے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ فرانس میں حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کے خلاف احتجاج اور پولیس کے ساتھ جھڑپوں میں اب تک تقریباً دس افراد ہلاک اور سینکڑوں زخمی ہو چکے ہیں۔
فرانس میں تیل کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف شروع ہونے والا احتجاج اب سرمایہ دارانہ نظام کے خلاف احتجاجی تحریک کی شکل اختیار کر چکا ہے جسے روکنے میں حکومت ناکام ہو گئی ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس