تاریخ شائع کریں۱ فروردين ۱۳۹۸ گھنٹہ ۲۱:۰۶
خبر کا کوڈ : 410106

نیوزی لینڈ دہشتگردی مغرب کی اسلام مخالف ایک خطرناک سازش ہے

ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا
ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ آزادی بیان کا دم بھرنے والے، مسلمانوں کے آزادی بیان کی سرکوبی کرتے ہیں جبکہ آزادی بیان کے نام پر وہ مسلمانوں کی ہر طرح کی توہین کرتے ہیں
نیوزی لینڈ دہشتگردی مغرب کی اسلام مخالف ایک خطرناک سازش ہے
ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ آزادی بیان کا دم بھرنے والے، مسلمانوں کے آزادی بیان کی سرکوبی کرتے ہیں جبکہ آزادی بیان کے نام پر وہ مسلمانوں کی ہر طرح کی توہین کرتے ہیں۔
ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے، جو او آئی سی کے وزرائے خارجہ کے ہنگامی اجلاس میں شرکت کے لئے ترکی کے شہر استنبول کے دورے پر ہیں آئی آر آئی بی سے گفتگو کرتے ہوئے نیوزی لینڈ کے دہشت گردانہ واقعے کو مغرب کی زیرقیادت اسلام مخالف ایک خطرناک کارروائی قرار دیا اور کہا کہ بعض مغربی حکام اور ادارے خاموشی اختیار کرکے اور یا اس خطرناک اقدام کی حمایت کر کے اس وحشیانہ جرم میں شریک ہیں۔انھوں نے نیوزی لینڈ کے سانحے کو مسلمانوں کے خلاف جاری سازشی عمل کا حصہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایران کی درخواست پر ترکی نے مناسب قدم اٹھتے ہوئے اس مسئلے کا جائزہ لینے کے لئے فوری طور پر او آئی سی کا ہنگامی اجلاس تشکیل دینے کا فیصلہ کیا۔او آئی سی کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں نیوزی لینڈ میں دہشت گردانہ واقعے کی مذمت اور اس قسم کے واقعات کی روک تھام کے لئے موثر تدابیر کی ضرورت پر زور دیا جائےگا۔ یہ اجلاس جمعے کو استنبول میں منعقد ہو رہا ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس