تاریخ شائع کریں۱۵ مهر ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۵:۵۲
خبر کا کوڈ : 365792

ڈالر کے تسلط کے دور کا مکمل خاتمہ قریب ہے

ممالک نے امریکہ کی جانب سے غنڈہ گردی، محاصرے، اقتصادی پابندیوں اور مسلسل جنگوں کے قیام کی وجہ سے جنہوں نے عالمی امن و امان اور معیشت کو درہم برہم کردیا ہے، امریکی ڈالر سے ہاتھ کھینچنے کی کوشیش کردی ہیں.
ڈالر کے تسلط کے دور کا مکمل خاتمہ قریب ہے
مریکی ڈالر کی حاکمیت کا دور آہستہ آہستہ ختم ہوتا جا رہا ہے

اخبار رای الیوم کے چیف ایڈیٹراورعرب دنیا کے معروف تجزیہ نگارعبدالباری عطوان نے گزشتہ روز گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈالر کے تسلط کے دور کا مکمل خاتمہ قریب ہے.

عبدالباری عطوان  کا کہنا تھا کہ بہت سے ممالک نے امریکہ کی جانب سے غنڈہ گردی، محاصرے، اقتصادی پابندیوں اور مسلسل جنگوں کے قیام کی وجہ سے جنہوں نے عالمی امن و امان اور معیشت کو درہم برہم کردیا ہے، امریکی ڈالر سے ہاتھ کھینچنے کی کوشیش کردی ہیں.

عبدالباری عطوان نے کہا کہ ایران، روس، چین اور وینزویلا سمیت بہت سے ممالک اپنے تجارتی معاملات خاص طور پر تیل کی فروخت اور تیل کے معاہدوں کے لیے ڈالر کے بجائے اپنی قومی کرنسیوں(یوآن، یورو، ریال اور روبل) استعمال کر رہے ہیں.

انہوں نے کہا کہ چین نے اگلے سال کے شروع سے اپنے تیل کے معاہدوں میں پیٹرو ڈالر کے بجائے پیٹرو یوآن استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے.

دوسری جانب روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے کہا ہے کہ امریکی ڈالر تنزلی کا شکار ہے جس کی وجہ سے عالمی مارکیٹ میں ڈالر کی اجارہ داری اب ختم ہونے والی ہے۔
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس