امریکی سینیٹروں نے سعودی ولیعہد کو قاشقجی کے قتل کا زمہ دار قرار دیا

امریکہ کے چھے سینیٹروں نے ایک قرارداد کا مسودہ تیار کیا ہے
امریکہ کے چھے سینیٹروں نے ایک قرارداد کا مسودہ تیار کیا ہے جس میں سعودی ولی عہد بن سلمان کو یمن میں انسانی المیے اور مخالف صحافی جمال خاشقجی کے قتل کا ذمہ دار قرار دیا گیا ہے۔
تاریخ شائع کریں : پنجشنبه ۱۵ آذر ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۶:۴۹
موضوع نمبر: 383741
 
امریکہ کے چھے سینیٹروں نے ایک قرارداد کا مسودہ تیار کیا ہے جس میں سعودی ولی عہد بن سلمان کو یمن میں انسانی المیے اور مخالف صحافی جمال خاشقجی کے قتل کا ذمہ دار قرار دیا گیا ہے۔

اس قرارداد کا مسودہ کہ جس پر عمل کیا جانا ضروری نہیں ہو گا، امریکہ کے ریپبلکن سینیٹروں لنڈسے گراہم، مارک روبیو اور تاڈ یونگ اور ڈیموکریٹ سینیٹروں ڈیانے فینسٹین، ایڈ مارکی اور کریس کونز نے مخالف صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بارے میں امریکی سی آئی اے کی سربراہ کے ساتھ غیر اعلانیہ اجلاس کے ایک روز بعد تیار کیا ہے۔لنڈسے گراہم نے بدھ کی رات ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ اس قرارداد میں صراحت کے ساتھ بن سلمان کو خاشقجی کے قتل کا ذمہ دار قرار دیا گیا ہے۔امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے چیئرمین باب کورکر نے بھی جمعرات کے روز سعودی عرب کے خلاف پابندیوں کا منصوبہ تیار کرنے کے لئے اجلاس تشکیل دینے کا اعلان کیا۔امریکی سینیٹروں کی یہ قرارداد ٹرمپ کابینہ کے اراکین کے ایسے بیانات کے منافی ہے جن میں انھوں نے دعوی کیا ہے کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ مخالف صحافی جمال خاشقجی کے قتل میں سعودی ولی عہد بن سلمان کا کوئی کردار رہا ہے۔
Share/Save/Bookmark