امریکی اقدامات شام کی سالمیت کے لیے خطرہ ہیں

روس کے وزیرخارجہ سرگئی لاوروف نے روسی ٹیلی ویژن چینل سے اپنی گفتگو میں کہا
شام میں دریائے فرات کے مشرقی ساحلی علاقوں میں دہشت گرد گروہوں کی حمایت میں امریکی اقدامات سلامتی کونسل کی قرارداد کی خلاف ورزی کے مترداف ہیں۔
تاریخ شائع کریں : سه شنبه ۱۳ آذر ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۳:۵۱
موضوع نمبر: 382995
 
روسی وزیرخارجہ نے شام میں امریکی مداخلت اور کشیدگی پیدا کرنے والی اس کی پالیسیوں کے نتائج کی بابت خبردار کیا ہے۔

روس کے وزیرخارجہ سرگئی لاوروف نے روسی ٹیلی ویژن چینل سے اپنی گفتگو میں شام میں دریائے فرات کے مشرقی ساحلی علاقوں میں امریکی اقدامات کو شام کی سالمیت اور اقتدار اعلی کی خلاف ورزی قراردیا اور کہا کہ شام میں دریائے فرات کے مشرقی ساحلی علاقوں میں دہشت گرد گروہوں کی حمایت میں امریکی اقدامات سلامتی کونسل کی قرارداد کی خلاف ورزی کے مترداف ہیں۔

روسی وزیرخارجہ نے کہا کہ امریکا یہ ظاہر کرنے کی کوشش کررہا ہے کہ اس کے اقدامات وقتی ہیں لیکن  اس موضوع کے انتہائی اہم ہونے کے پیش نظر علاقے کے ملکوں کے لئے یہ ایک خطرناک کھیل ہے۔

انہوں نے آستانہ مذاکرات کے تحت امن کے عمل کے بارے میں امریکا کے ذریعے مایوسی پھیلانے اور غلط اقدامات پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مغرب کے پاس شام کے سلسلے میں کوئی متبادل اسٹریٹیجی نہیں رہ گئی ہے۔

واضح رہے کہ امریکی فوج غیر قانونی طریقے سے شام اور ترکی کی سرحدوں پرعین العرب شہر سے تل ابیض شہر کے اطراف تک پانچ فوجی چیک پوسٹیں قائم کرچکی ہے اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد کے برخلاف امریکا بدستور شام میں دہشت گرد گروہوں کی حمایت کر رہا ہے۔
Share/Save/Bookmark